لیاری والے پانی کی بوند بوند کو ترس گئے

June 26, 2019

کراچی میں پانی کے ستائے لیاری والے ایک بار پھر ماڑی پور روڈ پر نکل آئے، ضلعی انتظامیہ نے مذاکرات کے بعد احتجاج ختم کروایا مگر مظاہرین سے دو دنوں کا وقت مانگا ہے۔

کراچی کا ماڑی پور روڈ ان دنوں پانی کے بحران سے ستائے ہوئے لوگوں کا احتجاجی مرکز بنا ہوا ہے، لیاری کے رہنے والے مرد و خواتین کہتے ہیں آخر کب تک ایسا چلے گا پہلے احتجاج کیا تو صرف پندرہ دن پانی فراہم کیا گیا۔

احتجاج کے باعث ماڑی پور روڈ پر تو ٹریفک جام ہوگیا اور اطراف کی سڑکوں پربھی ٹریفک کا دباؤ رہا جبکہ مسافروں کو سخت پریشانی جھیلنا پڑی۔

ضلع انتظامیہ کی جانب سے اسسٹںٹ کمشنر عبدالکریم میمن مذاکرات کیئے تو مسئلہ کے حل کے لئے دو دن کا وقت مانگ لیا تاہم 5 گھنٹوں کے بعد ماڑی پور روڈ پر ٹریفک کی روانی بحال ہوئی

واضح رہے کہ دو روزقبل بھی ماڑی پورروڈ پراطراف میں رہنے والوں نے پانی و بجلی کی بندش کے خلاف احتجاج کیا تھا۔

مظاہرین سے ضلعی انتظامیہ نے مذاکرات کیئے تھے اور پھر یقین دہانی کی لالی پاپ تھمادی گئی تھی۔

کراچی میں پانی کے بحران پر کیا سڑک بند کرکے احتجاج کرنا ہی واحد حل رہ گیا ہے، اس کے لئے شہری حکومت، سندھ حکومت اور وفاقی حکومت کو سنجیدگی سے سوچنا ہوگا۔