نیب بلوچستان کی کارروائی، سابق ٹاؤن ناظم کے بھائی سمیت 3 افراد گرفتار

June 26, 2019

نیب بلوچستان نے سرکاری زمیں سستے داموں من پسند افراد کو فروخت کرنے کے الزام میں سابق ٹاؤن ناظم کے بھائی سمیت تین ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

ترجمان نیب بلوچستان کے مطابق پشتوںخوا ملی عوامی پارٹی سے تعلق رکھنے والے سابق ایم این اے اور سابق ٹاون ناظم کوئٹہ قہارودان نے گرفتار تینوں ملزمان اور میٹروپولیٹن کارپوریشن کے افسران کی ملی بھگت سے شہر کے وسط میں واقع کروڑوں روپے مالیت کی سرکاری زمین اپنے بے نامی دار رشتہ دار کو غیر قانونی طور پر 99 سال کی لیز پر الاٹ کی۔

نیب کے مطابق اسی طرح سابق ناظم نے شہر کے وسط میں شاپنگ پلازہ کی تعمیر کے لئے سرکاری مارکیٹ کی رقم اپنے بھائی کے اکاؤونٹ میں وصول کی۔ اس اقدام سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا۔

تحقیقات مکمل ہونے پر نیب نے ملزمان کو طلبی کے نوٹس جاری کئے مگر ملزمان پیش نہ ہوئے، جس پر نیب بلوچستان انٹٰیلی جنس کی ٹیم نے کوئٹہ میں چھاپہ مار کر سابق ٹاؤن ناظم کےبھائی سمیت تین ملزمان رحمت اللہ، سلطان محمد اور عبدالرزاق کو گرفتار کر لیا۔

ملزمان کو احتساب عدالت میں پیش کیا گیا جنہیں عدالت نے 14 روزہ ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر دیا۔