نیب نے شرجيل ميمن کو کرپشن ميں ملوث قرار دے ديا

May 22, 2019

نیب نے شرجیل میمن کو کرپشن میں ملوث قرار دے دیا، نیب نے بتایا کہ شرجیل میمن نے خاندان کی سالانہ آمدن اٹھائیس کروڑ سے زائد ظاہر کی لیکن اصل آمدنی ایک ارب اکہتر کروڑ سے زیادہ ہے ۔

پیپلزپارٹی کے رہنما شرجیل انعام میمن کے خلاف آمدن سے زائد جائیداد بنانے کا کیس چل رہا ہے ،حساب مانگنے پرانہوں نے 2011 سے2018تک بائیس کروڑ چونسٹھ لاکھ اکسٹھ ہزارنوسو اکیانوے بتائی جبکہ خاندان کی سالانہ آمدن اٹھائیس کروڑچورانوے لاکھ سے زائد بتائی ۔

نیب نے انکشاف کیا کہ ایف بی آر کے مطابق شرجیل میمن کی اصل انکم 1 ارب 71 کروڑ 53 لاکھ 60 ہزارروپے ہے ، اصل اور ظاہر کی جانیوالی مالیت میں فرق ایک ارب بیالیس کروڑ اٹھاون لاکھ سے زائد ہے۔

نیب نے بتایا کہ تحقیقات میں شرجیل میمن کرپشن میں ملوث پائے گئے ہیں ان کے خلاف نیب کی دفعہ سیکشن 9 اے وی 1999 کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

نیب نے یہ بھی کہا کہ شرجیل میمن کے تو بیرون ملک بھی اربوں روپے کے اثاثے ہیں، شرجیل میمن دبئی میں کئی فلیٹس اور ولاز کے مالک ہیں۔