نشوہ کے والد نے دارالصحت کے مالکان سے صلح کرلی

May 22, 2019

کراچی کے علاقہ گلستانِ جوہر کے دارالصحت اسپتال میں غلط انجیکشن کے باعث نشوہ نامی بچی کی ہلاکت کے کیس میں حیران کن موڑ آگیا ہے۔ نشوہ کے والد قیصر اور اسپتال انتظامیہ میں معاملات طے پاگئے ہیں جس پر قیصر نے مقدمہ واپس لینے پر رضا مندی ظاہر کردی ہے۔

سماء ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق نشوا کے والد نے تھانے میں بیان جمع کروا دیا ہے جس کہا ہے کہ فریقین میں مصالحت ہوگئی ہے اور ایک معاہدہ طے پایا ہے جس کے تحت دارالصحت اسپتال کے مالکان ہر سال50  لاکھ روپے نشوہ ٹرسٹ کو دینے کے پابند ہوں گے۔

معاہدے کے مطابق نشوہ ٹرسٹ کی سفارش پر دارالصحت اسپتال کے مالکان سالانہ دو بچوں کو اسکالرشپ پر تعلیم دیں گے اور نشوہ کے نام سے اسپتال میں بچوں کا وارڈ قائم کیا جائے گا جبکہ دارالصحت اسپتال کی انتظامیہ میڈیا کے سامنے غفلت کا اعتراف کرے گی۔