پشاور کے ڈاکٹرز نے مذاکرات کیلئے مشروط آمادگی ظاہر کردی

May 19, 2019

پشاور میں ڈاکٹرز کونسل نے وزیر اعلیٰ کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش مشروط طور پر قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ مذاکرات کی میز پر وزیر صحت کو قبول نہیں کریں گے۔

حکومتی پالیسیوں سمیت وزیراعظم کے کزن نوشیروان برکی اور وزیر صحت ہشام انعام اللہ خان کے خلاف احتجاج کرنے والے ڈاکٹرز نے مشروط مذاکرات کے لیے آمادگی ظاہر کی ہے۔

ڈاکٹر اظہار نے کہا ہے کہ مذاکرات وزیر صحت کے ساتھ نہیں بلکہ کسی اور حکومتی نمائندے کے ساتھ کریں گے اور وزیر صحت مذاکرات پر بیٹھیں گے بھی نہیں جبکہ مذاکرات میں انصاف ڈاکٹر فورم کی نمائندگی قابل قبول نہیں ہوگی کیوں کہ انصاف ڈاکٹر فورم اس معاملے میں حکومتی فریق بن گئی ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ جب تک مذاکرات کامیاب نہیں ہوتے، ڈاکٹروں کی ہڑتال جاری رہے گی۔

ڈاکٹروں کی ہڑتال کو پانچ دن ہوگئے ہیں جس سے مریضوں کی مشکلات کا سامنا ہے جبکہ حکومت بھی معاملے کو ترجیحی بنیادوں پر سلجھانے میں سنجیدہ نظر نہیں آتی۔