گیس کی قیمتیں ایک بار پھر 47 فیصد تک بڑھنے کا امکان

May 17, 2019

عوام کے چولہے ٹھنڈے کرنے کی تیاری، اوگرا نے پنجاب اور خیبرپختونخوا والوں کیلئے گیس 47 فیصد اور سندھ و بلوچستان کیلئے 28 فیصد مہنگی کرنی کی سفارش کردی۔ ٹیرف اور سلیبز بھی تبدیل کرنے کی تجویز دی گئی ہے، اطلاق کی صورت میں 300 روپے ماہانہ سے کم بل دینے والے بھی اب تقریباً 800 روپے ماہانہ تک ادا کریں گے۔

آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کے اثرات عوام پر پڑنے والے ہیں، اوگرا نے پہلے ہی جھٹکے میں گیس قیمتیں 28 سے 47 فیصد تک بڑھانے کی سفارش کر دی۔

اوگرا کی سفارش کے مطابق صارفین کے سلیبز 7 سے کم کرکے 6 کردیئے جائیں گے، پنجاب اور کے پی کے صارفین کیلئے ٹیرف 236 روپے جبکہ سندھ اور بلوچستان کے صارفین کیلئے 159 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو بڑھ جائے گا۔

تقریباً 7 ماہ قبل بھی اوگرا نے گیس 143 فیصد تک مہنگی کر دی تھی اور اب وفاقی کابینہ کی منظوری ملنے پر یکم جولائی سے اطلاق کے بعد عوام پر اضافی بوجھ کچھ پڑے گا۔

نئے سلیبس کے مطابق فی الحال 300 روپے سے کم بل دینے والے تقریباً 800 روپے ماہانہ، 550 روپے بل دینے والوں کو 1555 روپے ماہوار ادائیگی کرنا ہوگی۔ جن صارفین کا بل پہلے 1200 سے 2300 روپے کے درمیان  آتا تھا، وہ تقریباً 1800 سے 3900 روپے تک ادائیگی کریں گے اور جن کا ماہانہ بل 3500 روپے سے کم آتا تھا، ان کا بل 4 ہزار سے 7 ہزار روپے تک آئے گا۔

اوگرا کی سفارش میں امیروں پر مزید مہربانی کی گئی ہے، جن کا بل پہلے 10 ہزار سے 13 ہزار روپے تک آتا تھا وہ 7 ہزار سے ساڑھے 11 ہزار روپے ماہانہ تک ادا کریں گے جبکہ فی الحال 25 ہزار سے 31 ہزار روپے تک ماہانہ بل بھرنے والوں کا بل 12 سے 16 ہزار روپے تک ہوجائے گا۔​