Thursday, October 22, 2020  | 4 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Latest

رمضان میں منافع خوروں کا کراچی کی مارکیٹوں پر راج

SAMAA | - Posted: May 7, 2019 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: May 7, 2019 | Last Updated: 1 year ago

کراچی کا 62 سالہ شہری محمد کریم رمضان المبارک کا پہلا طویل دن کام پر گزارنے کے بعد اپنے گھر روانہ ہوا تو اس کے ہاتھ میں سبزیوں سے بھرا ایک تھیلا بھی تھا، افطاری کیلئے کچھ پھل خریدنے کا ارادہ کیا تو ٹھیلے والے کے نرخ سن کر حیران رہ گیا۔

کریم نے جب پھل فروش ضمیر سے سرکاری نرخ کا پوچھا تو اس نے ہنستے ہوئے کہا کہ اگر سرکار کی ریٹ لسٹ پر پھل بیچے تو بس پھر ہوگیا کام۔

کریم کا کہنا ہے کہ دنیا بھر میں غیر مسلم رمضان المبارک کے دوران اشیائے ضروریہ کم نرخ پر فروخت کرکے مسلمانوں کو سہولت فراہم کرتے ہیں، لیکن پاکستان میں معاملہ اس کے برعکس ہے۔

کمشنر ہاؤس کراچی سے ہر سال نرخ نامہ جاری کیا جاتا ہے تاکہ پھل، سبزیوں، اناج اور دیگر ضروری اشیاء کی حکومت کی مقرر کردہ قیمتوں پر فروخت یقینی بنائی جاسکے، لیکن دکانداروں نے عوام کو من مانی قیمتیوں پر فروخت جاری رکھی ہوئی ہے۔

گلشن اقبال مارکیٹ میں خریدار خاتون بلقیس بی بی کا کہنا ہے کہ ہم ’’عوام‘‘ رمضان میں ہمیشہ انتہائی مہنگے داموں پھل، سبزیاں اور دیگر اشیاء خریدنے پر مجبور ہوتے ہیں، یہی معاملہ کئی دہائیوں سے جاری ہے اور ضلعی انتظامیہ ہمیشہ قیمتوں پر عملدرآمد سے متعلق زبانی جمع خرچ تک محدود رہتی ہے۔

سماء ڈیجیٹل نے جب چھوٹے پیمانے پر لگائی گئی مارکیٹ پر دورہ کیا تو پتہ چلا کہ پھل، سبزیاں، مرغی اور دیگر اشیاء طے شدہ نرخ کے بجائے غیر قانونی طور پر من مانی قیمتوں پر فروخت کئے جارہے ہیں۔

کیلا 150 روپے درجن، سیب 350 سے 400 روپے فی کلو، آڑو 160 روپے فی کلو، تربوز 40 روپے فی کلو، خربوزہ 120 روپے فی کلو، چیکو 150 روپے اور سردا 130 روپے فی کلو تک فروخت کئے جارہے ہیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ مارکیٹ میں دستیاب تمام پھل دوسرے درجے کے ہیں، اس کے باوجود وہ اول درجہ کے پھلوں سے بھی زیادہ قیمت پر فروخت کئے جارہے ہیں۔

کمشنر ہاؤس کراچی کی جانب سے رمضان المبارک کے آغاز پر جاری کی گئی فہرست کے مطابق اول اور دوئم درجے کے پھلوں کی قیمتیں درج ذیل ہیں۔

اول درجہ:

کیلا 83 روپے درجن، سیب 189 روپے فی کلو، خربوزہ 70 روپے فی کلو اور چیکو 95 روپے فی کلو۔

درجہ دوئم:

کیلا 63 روپے درجن، سیت 105 روپے کلو، خربوزہ 58 روپے کلو اور چیکو 75 روپے کلو۔

تربوز واحد پھل ہے جو فہرست کے مطابق مارکیٹ میں 43 روپے فی کلو دستیاب ہے۔

کمشنر کراچی افتخار شلوانی سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے حسب سابق یہ بیان دیا کہ رمضان المبارک کے دوران حکومتی قیمتوں کی نگرانی اور عملدرآمد کیلئے ضلعی سطح پر مانیٹرنگ ٹیمیں تشکیل دیدی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ منافع خوروں پر جرمانے کئے جائیں گے تاہم اس رپورٹ کے شائع ہونے تک کسی بھی منافع خور پر کوئی جرمانہ نہیں کیا گیا تھا۔

صارفین کے حقوق سے متعلق تنظیم کے کنزیومر رائٹس ایسوسی ایشن کے چیئرپرسن کوکب اقبال کہتے ہیں کہ انتظامیہ رمضان المبارک کے دوران اشیائے ضروریہ کی قیمتیں کنٹرول کرنے میں ناکام ہوچکی ہے، قیمتوں پر کنٹرول کا نظام ہر قیمت پر فعال بنانا ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ منافع خوروں کو جیل بھیجنا چاہئے، صرف جرمانہ حل نہیں ہے، ڈپٹی کمشنرز قیمتوں پر قابو پانے کیلئے مناسب انداز سے کام نہیں کررہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube