بلوچستان کیلئے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم 3 کیٹیگریز میں تقسیم

April 19, 2019

بلوچستان میں وفاقی ملازمین، صوبائی ملازمین اور عوام کیلئے کم لاگت اپارٹمنٹس کی تعمیر کا جلد آغاز ہوگا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کا کہنا ہے عوام کو بہتر رہائشی سہولتوں کی فراہمی کے حوالے سے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم ایک اہم پیشرفت ہے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیرصدارت اجلاس ہوا جس میں پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی فاؤنڈیشن کے ڈائریکٹر جنرل وسیم حیات باجوہ نے کوئٹہ اور گوادر میں نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کے تحت رہائشی مکانات کے منصوبے کے حوالے سے بریفنگ دی۔

اجلاس میں وفاقی وزیر محترمہ زبیدہ جلال، صوبائی وزیر میر سلیم کھوسہ، چیف سیکریٹری بلوچستان ڈاکٹر اختر نذیر، مختلف صوبائی محکموں کے سیکریٹریز اور اتھارٹی کے دیگر حکام بھی موجود تھے۔

ڈائریکٹر جنرل نے آگاہ کیا کہ وزیراعظم عمران خان کی خصوصی ہدایت کی روشنی میں ہاؤسنگ اسکیم کے میگا پروجیکٹ کا آغاز بلوچستان سے کیا جارہا ہے اور وزیراعظم کوئٹہ میں منصوبے کا سنگ بنیاد رکھیں گے، منصوبے کو 3 کیٹیگریز میں تقسیم کیا گیا ہے جس میں وفاقی حکومت کے ملازمین، صوبائی حکومت کے ملازمین اور عوام کیلئے کم لاگت کے اپارٹمنٹس کی تعمیر شامل ہے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم سے متعلق اہم اجلاس کی صدارت کررہے ہیں

ان کا کہنا تھا کہ کوئٹہ میں کچلاک اور وحدت کالونی میں سرکاری ملازمین اور عوام کیلئے اپارٹمنٹس تیار کئے جائیں گے جبکہ گوادر میں سرکاری ملازمین کیلئے اور اورماڑہ میں ماہی گیروں کیلئے رہائشی اپارٹمنٹس بنائے جائیں گے جبکہ منصوبے میں پلاٹ بھی دستیاب ہوں گے۔

وسیم حیات نے بریفنگ میں بتایا کہ ہاؤسنگ منصوبے میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال سے علاقے کی ضروریات کے مطابق کم قیمت اور کم وقت میں اپارٹمنٹس کی تعمیر کو یقینی بنایا جائے گا، ہاؤسنگ منصوبے کو مرحلہ وار مکمل کیا جائے گا اور ابتدائی طور پر وفاقی حکومت نے منصوبے کیلئے 5 ارب روپے مختص کردیئے ہیں۔

وزیراعلیٰ بلوچستان نے عوام کو بہتر رہائشی سہولتوں کی فراہمی کے حوالے سے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کو اہم پیشرفت قرار دیا، انہوں نے ہدایت کی کہ ہاؤسنگ اتھارٹی کے حکام اور متعلقہ صوبائی محکموں کے سیکریٹری اجلاس منعقد کرکے منصوبے کے دیگر امور کو حتمی شکل دیں۔

جام کمال خان نے کہا کہ اپارٹمنٹس کی تعمیر میں یہاں کے عوام کے طرز رہائش، بلوچستان کے موسمی حالات اور ماحول کو بھی مدنظر رکھا جائے، لوگوں کی اعتماد سازی کیلئے منصوبے کے بروقت آغاز اور مقررہ مدت کے اندر تکمیل کو یقینی بنایا جائے۔

وزیراعظم عمران خان 21 اپریل کو اپنے دورے کے دوران کوئٹہ میں منصوبے کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔