ہوم   >  پاکستان

محکمہ تعلیم کے ڈائریکٹر نے اپنے بیٹے کو سرکاری اسکول میں داخل کروادیا

4 months ago

والدین کا سرکاری اسکولوں پر اعتماد بڑھانے کیلئے محکمہ تعلیم کے ڈائریکٹر نے اپنے بیٹے کو سرکاری اسکول میں داخل کروادیا۔

ڈائریکٹر ایجوکیشن حافظ ابراہیم نے اپنے بیٹا محمد طلحہ کو دیر کے علاقے ثمر باغ کے ایک نجی اسکول میں پانچویں کلاس میں پاس ہونے کے بعد ہائی اسکول دامتل دیر میں داخل کرادیا۔

حافظ ابراہیم کا بیٹا محمد طلحہ والد کے اس فیصلے سے خوش ہے، کہتا ہے کہ انہیں سرکاری اسکول اور نظام پر پورا اعتماد ہے۔

ڈائریکٹر ابتدائی و ثانوی تعلیم حافظ محمد ابراہیم نے بتایا کہ سرکاری اسکولوں کا نظام پہلے سے بہت بہتر ہوچکا ہے، نا صرف اسکولوں کا انفرا اسٹرکچر ٹھیک ہوا ہے بلکہ اساتذہ کی کمی پر بھی کافی حد تک قابو پالیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 8 لاکھ امیدواروں میں ہم نے 17 ہزار اساتذہ این ٹی ایس کے ذریعے بھرتی کئے ہیں۔

حافظ ابراہیم نے بتایا کہ صوبائی حکومت نے سرکاری اسکولوں میں آئی ٹی لیبز، کھیل کے میدان اور اضافی کمروں سمیت دیگر بنیادی ضروریات پوری کی ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ جب تک وزراء، مشیر، ایم پی ایز اور ایم این ایز اپنے بچوں کو سرکاری اسکولوں میں داخل نہیں کرائیں گے تب تک سرکاری اسکولوں پر عوام کا بھروسہ نہیں بڑھے گا، تمام سرکاری ملازمین کو اپنے بچوں کو سرکاری اسکولوں میں داخل کرانا چاہئے۔

واضح رہے کہ مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش کی اپنی بیٹی بھی سرکاری اسکول میں پڑھ رہی ہے، اسی لئے انہوں نے کچھ عرصہ قبل محکمہ تعلیم کے افسران اور اساتذہ کو اپنے بچوں کو سرکاری اسکولوں میں داخل کرانے کی ہدایت کی تھی۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں