پشاور میٹرو کی تکمیل تک چھٹی بند ہے

April 15, 2019

پشاور میٹرو منصوبے کی تکمیل تک تمام ملازمین کی چھٹیاں منسوخ کردی گئی ہیں۔ پشاور ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل بھی تعطیل نہیں کریں گے۔

بی آر ٹی ترجمان کے مطابق منصوبے کی تکمیل سے قبل پشاور ڈیولپمنٹ اتھارٹی (پی ڈی اے) کا کوئی بھی ملازم چھٹی نہیں کرے گا جبکہ منصوبے پر کام تیز کرنے کے لیے ملازمین کی شفٹیں بھی ڈبل کی جائیں گی۔ ڈائریکٹر جنرل پی ڈی اے کو بھی ہدایت کی گئی کہ منصوبے کی تکمیل تک کوئی تعطیل نہیں لیں گے۔

یاد رہے کہ بی آر ٹی منصوبے کا افتتاح اکتوبر 2017 میں کیا گیا تھا اور اس وقت کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے 6 ماہ میں پروجیکٹ مکمل کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن منصوبے کی ڈیڈ لائن میں اب تک 5 بار توسیع کی جا چکی ہے۔

بی آر ٹی منصوبے کے حوالے سے چند دن پہلے صوبائی انسپکشن ٹیم کی رپورٹ منظرعام پرآگئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ناقص منصوبہ بندی اور غفلت برتنے کی وجہ سے عوام کا پیسہ ضائع کیا گیا ہے۔

مذکورہ رپورٹ صوبائی انسپیکشن ٹیم (پی آئی ٹی) نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی ہدایت پر تیار کی جو 27 صفحات پر مشتمل ہے۔

رپورٹ میں کئی خامیوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق فیزیبیلیٹی اسٹڈی، نکاسی آب۔ جیو ٹیکنکل رپورٹ، ہائی وے رپورٹ، ساخت رپورٹ، ٹریفک اور یوٹیلیٹی رپورٹ میں خامیوں کے باعث منصوبے میں تبدیلیاں کی گئیں جس کے نتیجے میں عوامی خزانے کو نقصان پہنچا اور ٹریفک کا نظام شدید متاثرہوگیا۔

اس رپورٹ کے نتیجے میں وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا نے پی ڈی اے کے ڈائریکٹر جنرل اور سیکریٹری بلدیات کو عہدے سے برطرف کردیا جبکہ مزید اعلیٰ حکام کے زد میں آنے کا امکان ہے۔

رپورٹ منظرعام پر آنے کے بعد پیپلز پارٹی نے بی آر ٹی منصوبے کے حوالے سے سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک کے خلاف نیب درخواست بھی جمع کی ہے۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ بی آر ٹی منصوبہ عوام کیلئے عذاب اور صوبے کے خزانے پر بوجھ بن چکا ہے۔ اتنا بڑا منصوبہ بغیر کسی منصوبہ بندی کے شروع کر کے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچایا گیا۔

درخواست میں کہا گیا ہے وقت کے ساتھ ساتھ منصوبے کی لاگت اربوں روپے بڑھ چکی ہے لہذا نیب قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچانے پر ریفرنس دائر کرکے ملزموں کو گرفتار کرے۔