ایل این جی اسکینڈل، چیئرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل ایک بار پھر نیب میں طلب

April 15, 2019

ایل این جی اسکینڈل میں قومی احتساب بیورو (نیب) راولپنڈی نے چیئرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل کو ایک بار پھر طلب کر لیا ہے۔

نیب  راولپنڈی نے عظمیٰ عادل کو 17 اپریل کو تمام ریکارڈ سمیت پیش ہونے کی ہدایت کی۔

نیب نے چیئرپرسن اوگرا کو پہلے بھی طلب کیا تھا مگر وہ پیش نہیں ہوئی تھیں۔

وزیراعظم کا سوئی نادرن اور سوئی سدرن کے ایم ڈیز کیخلاف انکوائری کا حکم

واضح رہے کہ دسمبر 2018 میں وزیراعظم عمران خان نے کمپریسرز لگا کر دوسروں کے حصے کی گیس کھینچے جانے پر سوئی سدرن اور سوئی ناردرن کے ایم ڈیز کیخلاف انکوائری کا حکم دیا تھا۔

اس  حوالے سے وزیر اعظم نے چیئرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دی تھی۔

سابق وزیراعظم نواز شریف نے یکم جولائی 2016 کو عظمیٰ عادل کو چیئرپرسن اوگرا تعینات کرنے کی منظوری دی تھی۔