Friday, January 22, 2021  | 7 Jamadilakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

حیدرآباد کی 100 سال پرانی درسگاہ کو یونیورسٹی کا درجہ مل گیا

SAMAA | - Posted: Mar 2, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 2, 2019 | Last Updated: 2 years ago

سندھ حکومت نے حیدرآباد کی سو سال پرانی درسگاہ گورنمنٹ کالج حیدرآباد کو یونیورسٹی کا درجہ دے دیا، کالج پرنسپل کو قائم مقام وائس چانسلر تعینات کردیا گيا ہے ۔ گورنمنٹ کالج حیدرآباد کو یونیورسٹی کا درجہ مل گيا، دیارام گِدومل نے 1917 میں ڈی جی نیشنل کالج کی بنیاد رکھی تھي، جس کا نام...

سندھ حکومت نے حیدرآباد کی سو سال پرانی درسگاہ گورنمنٹ کالج حیدرآباد کو یونیورسٹی کا درجہ دے دیا، کالج پرنسپل کو قائم مقام وائس چانسلر تعینات کردیا گيا ہے ۔

گورنمنٹ کالج حیدرآباد کو یونیورسٹی کا درجہ مل گيا، دیارام گِدومل نے 1917 میں ڈی جی نیشنل کالج کی بنیاد رکھی تھي، جس کا نام قیام پاکستان کے بعد گورنمنٹ کالج حیدرآباد رکھا گیا ۔

قديم درسگاہ کے طلبا میں سابق وزیراعظم راجا پرویز اشرف اور سابق وزیراعلیٰ سندھ عبداللہ شاہ سمیت کئی اہم شخصیات شامل ہیں ۔

شاندار اور تاریخی درسگاہ کا رقبہ 64 ایکڑ تھا مگر انتظامی نااہلي اور قبضہ مافيا نے اسے 22 ایکڑ تک محدود کرديا تاہم وائس چانسلر نے نئي جامعہ کيلئے فنڈز کی فراہمی کا مطالبہ کيا ہے ۔

وی سی حیدرآباد یونیورسٹی پروفیسر ناصرالدین کا کہنا تھا کہ سندھ گورنمنٹ کا شکرگزار ہوں کہ اس نے اپنا وعدہ پورا کیا، اب ہمیں فنڈز فراہم کرے تاکہ ابتدائی مرحلہ شروع ہوسکے۔

سندھ کا دوسرا بڑا شہر اب تک سرکاری جامعہ سے محروم تھا جبکہ حیدرآباد میں یونیورسٹی بنانے کے معاملے کو سیاسی نعرے کے طور پر بھی استعمال کیا جاتا رہا ہے ۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube