Thursday, October 29, 2020  | 11 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Latest

زخمی کا پہلے علاج، سندھ اسمبلی نے ’’امل عمر‘‘ بل 2019ء منظور کرلیا

SAMAA | - Posted: Jan 28, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 28, 2019 | Last Updated: 2 years ago

اب زخمی شخص کے علاج کیلئے پہلے پوليس رپورٹ اور ديگر چيزوں کی ضرورت نہيں، دوران علاج حراست ميں لينے کی اجازت بھی نہيں۔ سندھ اسمبلی نے انجرڈ پرسن ٹريٹمنٹ ’’امل عمر‘‘ بل 2019ء منظور کرليا۔ کراچی ميں فائرنگ، چاقو، چھری يا کسی اور حملے ميں زخمی ہونيوالے افراد کے اسپتال پہنچنے پر پہلے پوليس کو...

اب زخمی شخص کے علاج کیلئے پہلے پوليس رپورٹ اور ديگر چيزوں کی ضرورت نہيں، دوران علاج حراست ميں لينے کی اجازت بھی نہيں۔ سندھ اسمبلی نے انجرڈ پرسن ٹريٹمنٹ ’’امل عمر‘‘ بل 2019ء منظور کرليا۔

کراچی ميں فائرنگ، چاقو، چھری يا کسی اور حملے ميں زخمی ہونيوالے افراد کے اسپتال پہنچنے پر پہلے پوليس کو اطلاع دی جاتی تھی اور پوليس کے پہنچنے کے بعد علاج کيا جاتا تھا، دوران علاج پوليس زخمی سے تفتيش کرسکتی تھی ليکن اب ايسا نہيں چلے گا۔

سندھ اسمبلی ميں انجرڈ پرسن ٹریٹمنٹ ’’امل عمر‘‘ بل 2019ء  منظور کرليا گيا، جس کے بعد سرکاری و نجی اسپتالوں کو زخمی شخص کے علاج کیلئے پوليس رپورٹ کی ضرورت نہيں، کوئی ڈاکٹر يا اسپتال علاج سے پہلے ميڈيکل ليگل رپورٹ کا تقاضہ نہيں کرے گا۔

مزید جانیے : ہنگامی علاج کے اخراجات سندھ حکومت دےگی،مرتضیٰ وہاب

بل کے مطابق پہلے زخمی کا علاج بعد ميں ديگر امور ہوں گے، زخمی یا اہلخانہ سے علاج سے پہلے پیسے طلب کرنا جرم ہوگا، نجی اسپتال میں زخمی کے ہنگامی علاج کے اخراجات حکومت ادا کرے گی۔

بل میں یہ بھی طے کردیا گیا کہ زخمی سے دوران علاج نہ تفتيش کی جائے گی نہ ہی اسے حراست ميں ليا جائے گا جبکہ زخمی کو اسپتال پہنچانے والے فرد کو بھی ہراساں کرنا جرم ہوگا۔

بل کے تحت ہر اسپتال میں تمام سہولیات سے آراستہ 2 ایمبولینسز ہونا لازمی ہوگا، ایکٹ کی خلاف ورزی پر 5 لاکھ روپے جرمانہ ہوگا، کيس سیشن کورٹ میں چلے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube