Friday, October 23, 2020  | 5 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Latest

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کا نیب سے کلین چٹ مِلنے کا دعویٰ

SAMAA | and - Posted: Dec 17, 2018 | Last Updated: 2 years ago
Posted: Dec 17, 2018 | Last Updated: 2 years ago

  مالم جبہ اراضی کیس میں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے نیب سے کلین چِٹ ملنے کا دعویٰ کردیا، بولے کہ یہ ان کی نیب کے سامنے پہلی اور آخری پیشی ہے۔ محمود خان آج پیر کو نیب پشاور کے روبرو پیش ہوئے۔ میڈیا سے بات چیت میں بتایا کہ ان کو کوئی سوالنامہ نہیں...

 

مالم جبہ اراضی کیس میں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے نیب سے کلین چِٹ ملنے کا دعویٰ کردیا، بولے کہ یہ ان کی نیب کے سامنے پہلی اور آخری پیشی ہے۔

محمود خان آج پیر کو نیب پشاور کے روبرو پیش ہوئے۔ میڈیا سے بات چیت میں بتایا کہ ان کو کوئی سوالنامہ نہیں دیا گیا، سوال ہوا کہ کیا آپ کو نیب نے کلین چٹ دیدی تو جواب ہاں میں دیا۔

وزیراعلی خیبر پختونخوا مالم جبہ 275 کنال اراضی اسکینڈل کیس نیب کے ریڈار پر آئے، نیب میں تقریباً ایک گھنٹے کی پیشی کے دوران مالم جبہ سرکاری اراضی لیز پر دینے سے متعلق پوچھ گچھ ہوئی، جس کے بعد وزیراعلی نے نیب سے کلین چیٹ مِلنے کا دعویٰ کردیا۔

پیشی کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہم اداروں کا احترام کرتے ہیں اسی جذبے کے تحت میں نیب پشاور کے سامنے پیش ہوا، نیب نے مالم جبہ کی اراضی سے متعلق پوچھ گچھ کی۔

محمود خان نے کہا نیب کے نوٹس کی پیروی ملک سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے ہمارے عزم کا ثبوت ہے۔

انہوں نے کہا انہیں مالم جبہ اراضی لیز سے متعلق معاملے میں گواہ کی حیثیت سے بلایا گیا ہے‘ تاہم وہ یہ نہیں جانتے کہ اس اراضی کی لیز کے وقت وہ صوبائی وزیر صحت تھے بھی یا نہیں۔

انہوں نے کہاکہ نیب حکام نے مجھ سے مالم جبہ اراضی سے متعلق پوچھ گچھ کی اور میں نے انہیں بتایا کہ اس کیس سے میرا کوئی تعلق نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کوئی سوال نامہ نہیں دیا گیا اور جو کچھ پوچھا گیا اس کاجواب میں نے موقع پر ہی نیب حکام کو دیدیا۔

وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ اس کیس سے متعلق کسی بھی دستاویز پر میرے دستخط نہیں ہیں اور میں نے ابھی تک کیس کو پڑھا بھی نہیں۔

انہوں نے کہا کہ نیب نے مجھے کلین اینڈ کلیئر چٹ دیدی ہے‘ جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا یہ نیب میں آپ کی پہلی اور آخری پیشی تھی تو وزیراعلیٰ نے جواب دیا کہ جی ہاں بالکل ۔

  مالم جبہ اراضی کیس

نیب پشاور نے وزیراعلیٰ کوسرکاری زمین لیز پر دیے جانے کے کیس میں طلب کیا تھا۔ ان کو سابق صوبائی وزیر سیاحت کی حیثیت سے طلب کیا گیا تھا۔

اسیکنڈل میں سابق وزیراعلیٰ پرویزخٹک، وزیراعظم کے پرنسپل سیکریٹری اعظم خان اور سینیٹر محسن عزیز پہلے ہی پیش ہوچکے ہیں۔

خیبرپختونخوا کے سینئر وزیرعاطف خان کو بھی نیب نے 14 دسمبر کو طلب کیا تھا تاہم بیرون ملک دورے پر ہونے کے باعث وہ پیش نہ ہوسکے ۔

واضح رہے کہ مالم جبہ میں 2014 میں ریزورٹس کے لیے 275 ایکڑ پر مشتمل سرکاری اراضی لیز پر دی گئی تھی جس میں بے قاعدگیوں اور اقربا پروری کی شکایات سامنے آنے پر نیب خیبر پختونخوا نے تحقیقات کا آغاز کیا ہے۔

مالم جبہ کی اراضی لیز پر دینے کے وقت محمود خان صوبائی وزیر کھیل تھے جب کہ محسن عزیز خیبرپختونخوا اسپورٹس بورڈ کے چئیرمین تھے۔

اراضی کے لیز کا اشتہار 15 سال کے لئے دیا گیا تھا تاہم کنٹریکٹ حاصل کرنے کے بعد لیز 33 سال تک کر دی گئی تھی۔

 

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube