ہوم   >  پاکستان

بلوچستان کےساتھ ناانصافی نہیں ہونےدیں گے، چیف جسٹس ثاقب نثار

10 months ago

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے کہا  کہ کئی بار کہہ چکا ہوں کہ کیا وجہ ہے کہ بلوچستان میں چیف سیکرٹری اور آئی جی پولیس  پنجاب سے آتا ہے،میں نے پہلے بھی کہا کہ بلوچستان میں بھی سیلف گورننس کا نظام ہونا چاہئے جیسا کہ وہ دیگر صوبوں میں ہے ۔ چیف...




چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے کہا  کہ کئی بار کہہ چکا ہوں کہ کیا وجہ ہے کہ بلوچستان میں چیف سیکرٹری اور آئی جی پولیس  پنجاب سے آتا ہے،میں نے پہلے بھی کہا کہ بلوچستان میں بھی سیلف گورننس کا نظام ہونا چاہئے جیسا کہ وہ دیگر صوبوں میں ہے ۔


چیف جسٹس ثاقب نثارکاکوئٹہ میں ہائیکورٹ بارکی تقریب سےخطاب میں مزید کہنا  تھا  کہ میں رہوں نہ رہوں یہ نظام چلتا رہے گا ،سپریم کورٹ کا ادارہ اہم ہے ،میرے جانے کے بعد بھی اس ادارے میں بڑے قابل لوگ آئیں گے،چیف جسٹس آف پاکستان کا کہنا تھا کہ بلوچستان ہائی کورٹ کی اسامیوں  کو پُر کرنے کے حوالے  پہلے بھی بات کی ہے اور اب بھی کہتا ہوں کہ انھیں پہلی فرصت میں پُر  کریں گے اور جتنی جلدی نام بھیجے جائیں گےہم یہاں ججز کی کمی کو پورا کریں گے،ان کا کہنا تھا کہ میرے بارہا مانگنے کے باجود مجھے اب تک نام نہیں بھجوائے گئے۔


ان کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان کی سرزمین معدنیات سےمالامال ہے، بلوچستان آکرہمیشہ پیارپایا، بلوچستان کےساتھ ناانصافی نہیں ہونےدینگےبلکہ بلوچستان کےحقوق کاتحفظ کرینگے،انھوں نے کہا کہ اگر ہم اپنا صرف ايک بہترین سال اس ملک کوديں تو اس ملک ميں ايک سال ميں ہي بہتري آجائيگی ان کا کہنا تھا کہ ڈیم کی تعمیرآنےوالی نسلوں کیلئےبہت بڑاتحفہ ہوگا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں