Monday, March 8, 2021  | 23 Rajab, 1442
ہوم   > Latest

مولانا سمیع الحق کے سیکریٹری کو شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Nov 13, 2018 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 13, 2018 | Last Updated: 2 years ago

راولپنڈی پولیس نے جمیعت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے قتل کے معاملے میں ان کے سیکریٹری کو باضابطہ تفتیش میں شامل کرلیا ہے۔ دوسری جانب سیکریٹری گزشتہ 4 دن سے لاپتہ ہیں اور گھر والوں سمیت پارٹی رہنماؤں کو بھی ان کے بارے میں معلومات نہیں ہیں۔

پولیس کے مطابق مولانا سمیع الحق کے سیکریٹری احمد شاہ کو ضابطہ فوجداری 160 کے تحت تفتیشں میں شامل کرنے کے لیے تحریری حکم نامہ جاری کردیا گیا ہے۔

تفتیشی حکام نے کہا ہے کہ سیکریٹری احمد شاہ اور ان کے دیگر عزیز و اقارب پولیس کے رابطے میں ہیں اور احمد شاہ نے پولیس سے کچھ دن کا وقت مانگا ہے۔

پولیس کے مطابق مولانا سمیع الحق کے قتل میں اب تک 22 افراد کے بیانات ریکارڈ کیے گئے ہیں، جن میں ہاؤسنگ سوسائٹی کے ملازمین اور سوسائٹی کے رہائشی بھی شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: مولانا سمیع الحق کے قاتلوں سے بدلہ لیں گے، حامد الحق

اس سے پہلے یہ بات سامنے آئی تھی کہ احمد شاہ گزشتہ 4 دن سے لاپتہ ہیں جبکہ دارالعلوم جامعہ حقانیہ کی انتظامیہ نے اس معاملے پر لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔

جمعیت علمائے اسلام س کے رہنما مولانا یوسف شاہ نے سماء ڈیجیٹل کو احمد شاہ کے لاپتہ ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ وہ گزشتہ 4 دن سے غائب ہے جبکہ یہ واضح نہیں ہے کہ وہ خود روپوش ہوئے یا انہیں اداروں نے تفتیش کے لیے اٹھایا ہے۔

مولانا سمیع الحق کو 2 نومبر کو راولپنڈی کے علاقہ بحریہ ٹاؤن سفاری ولا میں قائم ان کی رہائش گاہ میں تیز دھار آلے کے وار کرکے قتل کیا گیا تھا اور اس دن احمد شاہ ان کے ساتھ تھے جبکہ مقتول کے اہل خانہ سمیت پولیس کو بھی احمد شاہ نے ہی اطلاع دی۔

احمد شاہ کے مطابق وہ 15 منٹ کے لیے مولانا سمیع الحق کو اکیلے چھوڑ کر باہر گئے تھے اور جب واپس آئے تو وہ اپنے بیڈ پر مردہ حالت میں پائے گئے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube