ملکی تاریخ میں پہلی بار ڈالر ایک ہی دن میں 12 روپے مہنگا ہوگیا

October 9, 2018

فاریکس ڈیلرز کے مطابق انٹر بینک میں ڈالر 124.25 روپے سے مہنگا ہوکر 137 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ تاریخ میں پہلی بار امریکی ڈالر ایک ہی دن میں 12 روپے 75 پیسے مہنگا ہوا ہے۔

حکومت کی جانب سے آئی ایم ایف سے قرضہ لینے کی اطلاعات پر مارکیٹ میں پاکستانی روپے کی قدر میں دباؤ دیکھا جا رہا ہے۔ تاریخ میں پہلی بار امریکی ڈالر ایک ہی دن میں مہنگا ہو کر بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔ معاشی تجزیہ کار محمد سہیل کا کہنا ہے کہ روپے کی قدر میں کمی آئی ایم ایف کے کہنے پر ہوئی ہے۔۔

 

آئی ایم ایف سے قرضہ لینے کی خبروں پر تاجروں اور اسٹاک مارکیٹ میں غیر یقینی صورت حال ہے۔ تجزیہ کاروں کے مطابق پہلے حکومت کی جانب سے گیس کے نرخ بڑھائے گئے اور اب بجلی مہنگی کرنے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں، جب کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے سے ملک میں مزید مہنگائی کا طوفان آئے گا۔

حکومت کا آئی ایم ایف سے بیل آؤٹ پیکیج لینے کا فیصلہ

اس سے قبل بھی ستمبر کے مہینے میں ڈالر کی قدر میں 5 پیسے کا اضافہ دیکھنے میں آیا۔ فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ ماہ ستمبر میں بھی انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں5 فیصد اضافہ ہوا، جس سے ڈالر کی قیمت خرید 124.20روپے سے بڑھ کر124.25روپے اور قیمت فروخت124.30روپے سے بڑھ کر124.35روپے پر جا پہنچی، جب کہ مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں بھی ڈالر30پیسے مہنگا ہوا تھا۔

پاکستان اسٹاک ایکسچینجِ، 14 ماہ میں پہلی بار 1300 پوائنٹس کی مندی

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ حکومت کی جانب سے پیر8 اکتوبر کو آئی ایم ایف سے بیل آؤٹ پیکج لینے کا فیصلہ کیا گیا۔ حکومتی اراکین کے مطابق معاشی مشکلات پر قابو پانے کیلئے بیل آؤٹ ناگزیر ہے۔

 

قبل ازیں وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا تھا کہ معیشت کو قدموں پر کھڑا کرنے کیلئے سخت فیصلے کرنے ہیں۔ آئی ایم ایف پہلے ہی پاکستان  کے مالی مسائل پر بیان دے چکا ہے، جس میں روپے کی قدر میں کمی اور مرکزی یبنک کے شرح سود کومزید بڑھانے کی رائے دی تھی۔