ایبٹ آباد تھانے میں پہلی خاتون محرر تعینات

Atif Qayum
September 12, 2018

ایبٹ آباد میں لیڈی ہیڈ کانسٹیبل گلناز بی بی کو ہزارہ ڈویژن کی تاریخ میں پہلی تھانہ محرر تعینات کردیا گیا۔

ہزارہ ڈویژن کی تاریخ میں پہلی بار پولیس کے محکمے میں خاتون محرر کو تعینات کیا گیا ہے، کیڈٹ گلناز 2008ء میں محکمہ پولیس میں بطور کانسٹیبل بھرتی ہوئیں، ریکروٹ کورس میں پہلی پوزیشن حاصل کرکے 2014ء میں ہیڈ کانسٹیبل تھانہ ویمن ایبٹ آباد تعینات ہوئیں۔

گلناز بی بی کہتی ہیں کہ محرر کیلے ٹیسٹ پاس کیا تو یہاں تعینات کیا گیا، مردوں کے ساتھ ڈیوٹی کرتے ہوئے مشکل ہے لیکن ساتھی اہلکار رہنمائی کرتے ہیں، امید ہے کہ افسروں کے اعتماد پر پورا اتروں گی۔

خاتون محرر کی تعیناتی سے عورتوں کو اپنی شکایات اور رپورٹ درج کرانے میں آسانی ہوگی۔

شہری کا کہنا ہے خاتوں اہلکار کا رویہ اچھا ہے، اس طرح دوسرے تھانوں میں بھی تعیناتی کی جائے تاکہ پولیس اسٹیشن آنے والی خواتین آسانی سے اپنے مسائل بتا سکیں۔