مسلم لیگ ن سے نوازشریف کانام نہیں ہٹے گا،الیکشن کمیشن کافیصلہ

September 12, 2018
 

 

الیکشن کمیشن نے فیصلہ سنادیاہےکہ مسلم لیگ ن سے نواز شریف کا نام نہیں ہٹےگا۔

الیکشن کمیشن میں نواز شریف کے نام سے مسلم لیگ ن کی رجسٹریشن منسوخ کرنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، مخدوم نیاز انقلابی کی درخواست پر چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے سماعت کی۔الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن کی رجسٹریشن منسوخی سےمتعلق درخواستوں پرفیصلہ سنا دیا۔ الیکشن کمیشن نے فیصلہ سنایا کہ مسلم لیگ ن سے نواز شریف کا نام نہیں ہٹےگا۔

الیکشن کمیشن نے ن لیگ کی رجسٹریشن منسوخی سےمتعلق درخواستیں مسترد کردیں۔الیکشن کمیشن نے متفقہ طور پر چاروں درخواستیں مسترد کیں۔

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ نواز شریف کی نااہلی کے بعد مسلم لیگ نواز سے ان کا نام نکالا جائے۔ انہوں نے کیس کی سماعت کیلئے فل بینچ تشکیل دینے کی استدعا بھی کی تھی۔چیف الیکشن کمشنر نے کہا تھا کہ کوئی ایک قانونی نکتہ بتا دیں جس سے لگے کہ اس درخواست پر فل بینچ تشکیل دیا جانا چاہئے۔مسلم لیگ ن کے وکیل نے کہا تھاکہ الیکشن ایکٹ میں نااہل شخص کے نام سے پارٹی رجسٹریشن کے حوالے سے کوئی ممانعت نہیں، ذوالفقار علی بھٹو اور قائداعظم کے نام پر بھی جماعتیں رجسٹرڈ ہیں۔چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس میں کہا تھاکہ وفات پا جانے والے شخص کے نام سے پارٹی رجسٹریشن پر کوئی پابندی نہیں۔

مسلم لیگ ن کے مستقبل کا فیصلہ 12 ستمبر کو ہوگا

الیکشن کمیشن نے10 ستمبر کو رجسٹریشن کیخلاف درخواست پرفیصلہ محفوظ کیا تھا۔