توہین عدالت کیس : عامر لیاقت حسین پر نااہلی کی تلوار لٹکنے لگی

Shehzad Ali
September 11, 2018

شہزاد علی

سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں عامر لیاقت کا معافی نامہ مسترد کردیا، فرد جرم عائد کرنے کی تاریخ 27 ستمبر مقرر کردی گئی، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مذاق ہی بنالیا گیا ہے کہ پہلے توہین کرو پھر معافی مانگ لو، جرم ثابت ہوا تو رہنماء پی ٹی آئی نااہل ہوجائیں گے۔

توہین عدالت کیس میں ڈاکٹر عامر لیاقت حسین پر نااہلی کی تلوار لٹک گئی، سپریم کورٹ نے رہنماء پی ٹی آئی کا تحریری معافی نامہ مسترد کر دیا، 27 ستمبر کو آئندہ سماعت پر فرد جرم عائد ہوگی۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مذاق بنا لیا ہے پہلے توہین کرو پھر معافی مانگ لو، تذلیل کرانے کیلئے عدالت میں نہیں بیٹھے، عامر لیاقت نے تحریری جواب میں کہیں پر غلطی تسلیم نہیں کی، معافی نامے والا پیرا گراف قانون کے مطابق نہیں۔

وکیل صفائی نے مؤقف اختیار کیا کہ عامر لیاقت کے پروگرام سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کئے گئے۔ اس پر چیف جسٹس نے کہا عدالت نے دیکھنا ہے کہ حکمنامے کے بعد خلاف ورزی ہوئی یا نہیں، صرف الفاظ نہیں ادائیگی اور باڈی لینگویج بھی دیکھیں گے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ توہین عدالت ثابت ہوئی تو پی ٹی آئی رہنماء ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نااہل ہوجائیں گے۔ کیس کی سماعت 27 ستمبر تک ملتوی کردی۔