کرپٹ افراد کہیں بھی چلے جائیں پیچھا کرینگے، چیئرمین نیب

September 11, 2018

چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کہتے ہیں کہ کرپٹ لوگ دنیا کے کسی کونے میں بھی چلے جائیں ان کا پیچھا کریں گے۔


اسلام آباد چیمبر آف کامرس میں تاجروں سے خطاب میں جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا کہ لوٹی گئی دولت واپس لانا میرے فرائض میں شامل ہے، جُرم خواہ معمولی ہی کیوں نہ ہو معاف نہیں کیا جائے گا۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ جو کام تاجر برادری کر سکتی ہے وہ کوئی اور نہیں کر سکتا، تاجر برادری خوشحال ہوگی تو پاکستان خوشحال ہوگا۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ نیب اب تک 297 ارب روپے بازیاب کروا چکا ہے، جب کہ نیب میں چلنے والے کیسز میں تاجر براداری کے کسی نمائندے کا نام نظر نہیں آیا، ٹھیک کام کرنے والے تاجر کو خوف نہیں ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ نیب میں تاجر برادری کےلئے اسپیشل ڈیسک بنا دی ہے جو کہ آج شام 4 بجے فعال ہو جائے گی۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ 80 کی دہائی میں کوئی موٹر سائیکل پر گھومتا تھا لیکن اب دبئی میں اس کے ٹاور ہیں، غلطیاں اور جرم میں فرق ہوتا ہے۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ نیب کا کسی سے کوئی تعلق نہیں، ہماری وفاداری صرف پاکستان کے ساتھ ہے، نیب کے دفتر میں سارے اثر و رسوخ ختم ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کرسی کے شوق میں نیب میں نہیں بیٹھا، آخری اننگ کھیل رہا ہوں چاہتا ہوں یہ یادگار ہو جائے، کوئی چیز موجودہ نیب پر اثر انداز نہیں ہوسکتی۔