پشاور: ہارون بلور پر خودکش حملے کا ایک زخمی 2 ماہ بعد چل بسا

September 11, 2018

پشاور کے علاقہ یکہ توت میں عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما ہارون بلور پر ہونے والے خودکش حملے کا ایک اور زخمی دو ماہ تک زیر علاج رہنے کے بعد چل بسا۔

واضح رہے کہ 10 جولائی کی شام پشاور کے علاقہ یکہ توت میں عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار برائے صوبائی اسمبلی ہارون بلور پر خودکش حملہ ہوا تھا جس میں ہارون بلور سمیت 2 درجن سے زائد افراد شہید ہوئے۔ دھماکے میں زخمی متعدد افراد دوران علاج دم توڑ گئے۔

ایک زخمی جمیل شاہ ولد بغداد شاہ 2 ماہ لیڈی ریڈنگ اسپتال میں زیر علاج رہنے کے بعد گزشتہ روز چل بسا۔

جمیل شاہ کی نماز جنازہ کوہاٹی چوک بہرام آباد میں ادا کی گئی اور بعد ازاں انہیں آبائی قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا۔

ہارون بلور صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی کے 78 سے عوامی نیشنل پارٹی کے ٹکٹ پر انتخابات میں حصہ لے رہے تھے۔ ان کی شہادت کے بعد ان کی بیوہ ثمر بلور اسی حلقہ سے ضمنی انتخاب لڑیں گی۔ خیبر پختونخوا کی تمام اپوزیشن جماعتوں نے ثمر بلور کی حمایت کا فیصلہ کیا ہے۔