عذرا پیچوہو نے ہراسگی کو جھوٹا الزام قرار دیدیا، لڑکی نے انصاف کی اپیل کردی

September 9, 2018

نواب شاہ میں طالبہ کے ہراساں کرنے کے الزام کو صوبائی وزیر صحت نے جھوٹ قرار دے دیا ۔ طالبہ فرزانہ جمالی نے عذرا پیچوہو کے بیان پہ دکھ کا اظہار کرتے ہوئے وزیراعظم اور چیف جسٹس سے انصاف کی اپیل کر دی ۔

سماء کے نمائندے مشرف علی کے مطابق نواب شاہ کی شہید بینظیر یونیورسٹی کی طالبہ کے ہراسانی کے الزام کو صوبائی وزیر صحت سندھ نے جھوٹ قرار دے دیا ۔

عذرا پیچوہو کہتی ہیں معاملے کی تحقیقات کروائی ہے۔ اِس میں کوئی حقیقت نہیں ۔

وزیر صحت کے بیان پر طالبہ فرزانہ جمالی نے دکھ کا اظہار کیا۔ کہتی ہیں عورت ہونے کے ناطے ساتھ دینے کے بجائے واقعے کو جھوٹ قرار دینے پر دکھ ہوا ۔

طالبہ نے کہا کہ کوئی بھی لڑکی خود پر اتنی بڑی بات نہیں لیتی، معاملے کی تحقیقات کے بجائےعذرا پیچوہو نے اسے جھوٹ قرار دے دیا۔

فرزانہ جمالی نے وزیراعظم اور چیف جسٹس سے انصاف کی اپیل کرتے ہوئے شفاف تحقیقات کے لیے وی سی ارشد سلیم اور عامرخٹک کو عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ بھی کردیا ۔