ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت سے خاتون ڈاکٹر جاں بحق، چیف جسٹس کا تحقیقات کا حکم

Shahid Hussain
September 8, 2018

ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت سے خاتون ڈاکٹر کی جان چلی گئی، لاہور کے نجی اسپتال کی شکایت کرتے ہوئے لڑکی کا والد چیف جسٹس کے سامنے زارو قطار رو پڑا، چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ نجی اسپتالوں کو کھلی چھوٹ نہیں دی جاسکتی، معاملے کی تحقیقات کرائی جائیں۔

لاہور میں بچے کی پیدائش کیلئے ڈاکٹر ثناء کو نجی اسپتال لایا گیا، مگر ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت سے وہ موت کے منہ میں چلی گئی، واقعہ 14 اگست کو پیش آیا تھا، بدقسمت باپ اپنی فریاد لیکر 25 اگست کو سپریم کورٹ پہنچا مگر چیف جسٹس پاکستان سے ملاقات نہ ہوسکی۔

میاں مجاہد کا کہنا ہے کہ میری بیٹی ڈاکٹر ثناء کو نارمل ڈیلیوری کیلئے 20 گھنٹے تک لیبر روم میں رکھا گیا، پھر اس  ے بعد میت ہمارے حوالے کردی گئی۔

معاملہ چیف جسٹس کے نوٹس میں آیا تو انہوں نے فوری طور پر پنجاب کی وزیر صحت کو طلب کرلیا اور تحقیقاتی ٹیم تشکیل دینے کا حکم دے دیا۔ سپریم کورٹ سے تحقیقات کا حکم جاری ہونے پر لڑکی کے باپ نے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔