الیکشن کمیشن نے فضل الرحمن کا مطالبہ مسترد کردیا

September 8, 2018
 

الیکشن کمیشن نےمولانا فضل الرحمن کا استعفی دینےسےمتعلق بیان مسترد کردیا۔ مولانا فضل الرحمان نے چیف الیکشن کمشنر سے استعفیٰ دینے کا مطالبہ کیاتھا۔

ترجمان الیکشن کمیشن نے بتایاکہ عام انتخابات2018 کا صاف شفاف اورغیرجانبدارانہ انعقاد کیا گیا۔ بغیر ثبوت کے ایسے بیانات دینا افسوسناک اور حقائق سے برعکس ہے۔

ترجمان الیکشن کمیشن نےبتایاکہ عام انتخابات کے دوران عوام نےآزادانہ اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔عوام کےمینڈیٹ کا احترام نہ کرنا جمہوریت کےبنیادی اصولوں کےمنافی ہے۔ترجمان نےبتایاکہ انتخابی عذرداریوں سےمتعلق الیکشن کمیشن نےانتخابی ٹریبونل قائم کیےہیں۔ امیدوار کو کوئی شکایت ہے تو قانون میں اس کا طریقہ کار موجود ہے۔

ترجمان الیکشن کمیشن نےبتایاکہ قومی اداروں کو تنقید کا نشانہ بنانےکی روایت اب ختم ہونی چاہیے۔ الیکشن کمیشن ایک خود مختار ادارہ ہے جو ایسے کسی دباؤ کو قبول نہیں کرتا۔