Tuesday, December 1, 2020  | 14 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

برطانیہ کا اسحاق ڈار، حسن اور حسین نواز کی واپسی میں معاونت کا عندیہ

SAMAA | - Posted: Sep 4, 2018 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Sep 4, 2018 | Last Updated: 2 years ago

برطانیہ نے سابق وزير خزانہ اسحاق ڈار، حسن اور حسین نواز کی پاکستان واپسی کے حوالے سے تعاون کا عندیہ دیدیا۔ برطانوی ہائی کمشنر تھامس ڈریو کہتے ہیں درخواست آئی تو میرٹ کے مطابق غور کریں گے، پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کیلئے تعاون کی بھی پیشکش کر دی۔

برطانوی ہائی کمشنر تھامس ڈریو نے پالیسی ریسرچ انسٹی ٹیوٹ اسلام آباد میں ”بعد از بریگزٹ خارجہ پالیسی کے تناظر میں پاک۔برطانیہ تعلقات“ پر لیکچر میں کہنا تھا کہ پاکستان نے منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئے تدارکی اقدامات اٹھا کر ایف اے ٹی ایف کے معاملہ پر گذشتہ 5 ماہ میں بہت اچھا کام کیا ہے، نئی پاکستانی حکومت کو ایف اے ٹی ایف کے مسئلہ کے حل اور گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے تکنیکی معاونت فراہم کرنے کو تیار ہیں، بعد از بریگزٹ دنیا میں برطانیہ معیشت اور تعلیم میں اشتراک کار پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے ایک پُرامن اور خوشحال پاکستان کے اپنے وژن کو تقویت دیتا رہے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے بارے میں بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کی کوریج ہمیشہ مناسب نہیں ہوتی، پاکستان کے استحکام، سیکیورٹی اور خوشحالی میں برطانیہ کا بہت زیادہ براہ راست اور منفرد مفاد ہے، ہمیں بعض مشترکہ مواقع اور چیلنجز کا سامنا ہے۔

سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے بیٹوں سمیت منی لانڈرنگ میں ملوث پاکستانی ملزمان کی واپسی کیلئے برطانیہ کے کسی ادارے سے رابطے سے متعلق سوال کے جواب میں برطانوی ہائی کمشنر بولے کہ اگرچہ وہ انفرادی کیسز پر تبصرہ نہیں کرسکتے تاہم ہم میرٹ پر پاکستان حکومت کی کسی درخواست پر غور کریں گے۔

تھامس ڈریو کہتے ہیں کہ پاکستان، بھارت اور دنیا کے مفاد میں ہے کہ جموں و کشمیر سمیت اپنے تمام تصفیہ طلب مسائل حل کریں، پاک۔چین اقتصادی راہداری نا صرف پاکستان بلکہ خطہ کیلئے بھی بہت زیادہ اقتصادی مواقع کی حامل ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube