سپریم کورٹ نے پی آئی اے سربراہ کو عہدے سے ہٹا دیا

September 3, 2018

سپریم کورٹ نے پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز ( پی آئی اے) کے چیئرمین مشرف رسول کے عہدے سے ہٹا دیا۔

سپریم کورٹ میں پی آئی اے کی نجکاری سے متعلق خصوصی آڈٹ کیس کی سماعت ہوئی۔ اس دوران چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ مشرف رسول کی بطورسی ای او کاکردگی قابل ستائش نہیں ہے۔ سی ای او سے اچھی کاکردگی تو پی ائی اے کے ایچ آرڈپارٹمنٹ کی ہے۔ سی ای او کی تقرری غیر قانونی ہے۔

جسٹس اعجاز الحسن نے کہا کہ ایشو یہ ہے کہ تقرری کے عمل میں قواعد اورقانونی تقاضوں کا خیال نہیں رکھا گیا۔

بعد ازاں عدالت نے مختصر فیصلہ سناتے ہوئے مشرف رسول کی تعیناتی کو خلاف قانونی قرار دیتے ہوئے ان کو عہدے سے ہٹا دیا۔ فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ مشرف تقرری کے اہل نہیں تھے۔