امریکا امداد نہیں اتحادی سپورٹ فنڈ کی مد میں ڈالر دے رہا تھا، وزیر خارجہ

September 2, 2018

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ امریکا امداد نہیں اتحادی سپورٹ فنڈ کی مد میں ڈالر دے رہا تھا، امریکا سے عزت واحترام کے دائرے میں رہ کر تعلقات قائم کریںگے۔

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ امریکا امداد نہیں اتحادی سپورٹ فنڈ کی مد میں ڈالر دے رہا تھا، 5 ستمبرکو امریکی وزیرخارجہ پاکستان آرہے ہیں، امریکا سے عزت واحترام کے دائرے میں رہ کر تعلقات قائم کریںگے، باہمی دلچسپی کےمفادات کو سامنے رکھ کر تعلقات کو فروغ دینگے۔

انہوں نے کہا کہ یہ کوئی امدادنہیں،وہ پیسہ ہےجوہم نےخرچ کیےتھے، امن کی بحالی کیلئےجوپیسہ امریکاکی طرف واجب الاداتھانہیں دیاگیا،امریکی وزیرخارجہ کےدورےسےتعلقات میں بہتری آئے گی۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ خطےمیں امن کیلیے پاکستان نے جانی ومالی قربانیاں دیں،گزشتہ حکومت میں امریکا سے گفت وشنید کےحوالے سے تعطل رہا، خطے کو دہشت گردی سے پاک کرناچاہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ جی ایچ کیو میں وزیراعظم کو دی گئی بریفنگ ملکی مفاد میں ہے، دہشتگردی کیخلاف پاک فوج اور عوام نے قربانیاں دیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ فرانسیسی صدرکی کال آئی، وزیراعظم مصروف تھے، باہمی اتفاق سےطے ہوا کہ پیر کو گفتگو ہوگی۔

شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ جلال آباد قونصلیٹ ہم نے خود بند کیا ہے، افغان حکومت نے قونصلیٹ کی سیکیورٹی کی بحالی کاعندیہ دیا، کل افغان ہم منصب سے اس معاملے پر مزید بات ہوگی۔