مولانا فضل الرحمان کی محمود اچکزئی سے ملاقات،صدارت کے لیے حمایت پر قائل کر لیا

August 31, 2018

صدارتی مہم کے سلسلے میں کوئٹہ میں جے یو آئی ایف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی پشتنونخواہ میپ کے سربراہ محمود خان اچکزئی سے ملاقات ہوئی۔

 

میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ صدارتی انتخابات میں محمود خان اور انکی جماعت بھرپور حمایت کر رہے ہیں جس پر محمود خان اچکزئی اور انکے رفقا کا مشکور ہوں، ہمیں یقین ہے کہ پیپلز پارٹی اس وحدت کے لئے اپنا امیدوار دستبردار کرائے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اسوقت حزب اختلاف کی جماعتیں بین الاقوامی معیشت اور سازشوں سے آزاد کروانے کی جہد وجہد کر رہی ہیں اور ابتک ہم آزادی کے اصل مقاصد حاصل نہیں کر سکے ہیں۔

 

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پشتنونخواہ میپ کے سربراہ محمود خان اچکزئی کا کہنا تھا کہ تبدیلی کا نعرہ تحریک انصاف نے لگایا مگر تبدیلی ہم لائیں گے، کیا مزا آئے گا جب عمران خان وزیراعظم ہونگے اور مولانا فضل ارحمان صدر ہونگے، ہم اپوزیشن جماعتوں کا متحدہ امیدوار لانے کی کوشش کررہے ہیں۔

 

پشتنونخواہ میپ کے سربراہ کا مزید کہنا تھا کہ ہم چاہتے ہیں کہ عمران خان اور مولانا فضل الرحمان ایک ہی چبوترے میں کھڑے ہوکر سلامی لیں، ہمیں ایشین ٹائیگر بننے کے لئے آئین کی بالادستی کو یقینی بنانا ہوگی۔

 

.ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے دونوں رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ماضی کاملاملٹری الائنس ایم ایم اےاب محمود ملاالائنس میں تبدیل ہوگیاہے