الیکشن 2018: تحریکِ انصاف میدان مار لے گی ، سروے

July 23, 2018

الیکشن دوہزار اٹھارہ میں کون سی جماعت کتنی نشستیں حاصل کرے گی حکومت کون بنائے گا انتخابی سروے اور جائزوں میں تحریکِ انصاف آگے نکل گئی۔

اگلی حکومت کس کی ہوگی فیصلہ تو پچیس جولائی کے بعد ہی ہوگا لیکن ملک بھر میں ہونے والے سروے اور جائزے تحریکِ انصاف فیورٹ قرار دے رہے ہیں، غیرجانبدار سروے اور پول کے مطابق تحریکِ انصاف عام انتخابات دوہزار اٹھارہ کا معرکہ باآسانی سر کرلے گی ۔

پلس کے سروے کے مطابق تحریکِ انصاف اور ن لیگ میں کانٹے کا مقابلہ ہوگا لیکن میدان پی ٹی آئی کے ہاتھ رہے گا جو مجموعی طور پر پینتس فیصد نشستیں حاصل کرے گی جبکہ ن لیگ اکتیس فیصد سیٹیں نکال سکتی ہے۔

ہیرالڈ نے بھی اپنے جائزے میں پی ٹی آئی کا پلڑا بھاری بتایا ہے جو انتیس فیصد ووٹ حاصل کرلے گی جبکہ دوسرے نمبر پر ن لیگ ہوگی جو پچیس فیصد ووٹ حاصل کرسکتی ہے، سروے میں یہ بھی بتایا گیا کہ تحریکِ انصاف نہ صرف خیبرپختونخوا کی مقبول جماعت ہے بلکہ پنجاب میں بھی اس مقبولیت سڑسٹھ فیصد سے بڑھ کر پچھتر فیصد ہوگئی ہے اور پہلی بار کے پی میں ایک جماعت دوسری بار جیتے گی ۔

روشن پاکستان اوپینین کا کہنا ہے اگرچہ کہ کوئی بھی سیاسی جماعت واضح اکثریت حاصل نہیں کرسکے گی تاہم تحریکِ انصاف کا پلڑا بھاری رہے گا ۔

سروے کے مطابق تحریکِ انصاف اٹھانوے سیٹوں کے ساتھ اکثریتی جماعت رہے گی جبکہ مسلم لیگ ن دوسرے نمبر پر آئے گی اس کی سیٹوں کی تعداد ستر ہوسکتی ہے، تیسری بڑی جماعت پیپلزپارٹی ہوگی جو اکتالیس نشستیں نکال لے گی، چوتھی بڑی سیاسی قوت آزاد امیدوار ہوں گے جو 26 نشستیں نکال سکتے ہیں ۔