Saturday, January 22, 2022  | 18 Jamadilakhir, 1443

پشاور میٹرو کا ٹھیکہ بلیک لسٹ کمپنی کو دیا گیا، کیس نیب کو ارسال

SAMAA | - Posted: Jul 19, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Jul 19, 2018 | Last Updated: 4 years ago

پشاور ہائیکورٹ نے بس ریپڈ ٹرانزٹ ( بی آر ٹی) کیس میں تفصیلی فیصلہ جاری کردیا ہے جس کے مطابق پشاور میٹرو کا ٹھیکہ جس فرم کو دیا وہ دوسرے صوبوں میں پہلے سے بلیک لسٹ کیا گیا تھا۔ عدالت عالیہ نے کیس مزید تحقیقات کے لیے نیب کو ارسال کردیا۔

پشاور سے سما ڈجیٹل کے رپورٹر صابر شاہ ہوتی کے مطابق ہائیکورٹ نے فیصلے میں لکھا ہے کہ منصوبہ 24 جون 2018 کو مکمل جانا تھا لیکن ابھی تک مکمل نہیں ہوسکا اور منصوبے کی لاگت بھی 49.3 بلین سے بڑھ کر 67.9 بلین روپے تک پہنچ گئی ہے۔

فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ خیبر پختونخوا کی سابق حکومت نے دیگر منصوبوں کے فنڈز بھی بی آر ٹی میں جھونک دئے گئے۔

واضح رہے کہ چیئرمین نیب نے پہلے ہی منصوبے میں غیر معمولی تاخیر کا نوٹس لیکر تحقیقات کا حکم دیا تھا جس پر پشاور ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے ایک وضاحتی بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ پی ڈی اے نے کبھی بھی منصوبے کی جون میں تکمیل کا دعویٰ نہیں کیا۔ اس قسم کے تمام دعوے سابق صوبائی حکومت کے وزرا کرتے رہے۔

دوسری جانب پشاور میٹرو کے لیے سڑکوں میں کھودے گئے بڑے بڑے گڑھے عوام کے لیے وبال جان بن گئے ہیں۔ کیچڑ اور ٹریفک جام کے معمول بن گیا ہے۔

تشویشناک امر یہ ہے کہ ان گڑھوں میں بارش اور پائپ لائن کا پانی جمع ہورہا ہے جس میں ڈٰینگی اور ملیریا مچھر کی افزائش کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ نگراں حکومت نے متعلقہ اداروں کو ان گڑھوں میں ڈٹرجنٹ ملانے یا پانی خالی کرنے کا حکم دیا ہے تاکہ ڈینگی اور ملیریا سمیت دیگر مہلک بیماریوں کا سدباب ہوسکے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube