Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

ایون فیلڈ سے اڈیالہ تک، نواز اور مریم کا سفر شروع

SAMAA | and - Posted: Jul 12, 2018 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA | and
Posted: Jul 12, 2018 | Last Updated: 3 years ago

ARTWORK: AYESHA ATHER

پاکستان کے 3 بار وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم گرفتاری دینے کیلئے 13 جولائی کو لندن سے پاکستان آرہے ہیں۔

احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں آمدن سے زائد اثاثوں پر نواز شریف کو 10 سال قید بامشقت اور 80 ملین پاؤنڈ جبکہ مریم نواز شریف کو اپنے والد کی جائیداد چھپانے میں معاونت پر 7 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

مزید جانیے : مریم اور حسین نواز کے بیٹے لندن میں زیرحراست

عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ وہ (مریم نواز) اپنے والد کی سازش میں مددگار اور معاون رہیں۔

احتساب عدالت کے فیصلے کے مطابق ’’مریم نواز کی جانب سے پیش کردہ ٹرسٹ ڈیڈ (ملکیت کا وقف نامہ) بھی جعلی تھا‘‘۔ جس پر انہیں مزید ایک سال کی سزا سنائی گئی ہے۔

نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر کو احتساب عدالت سے تعاون نہ کرنے، اپنہ اہلیہ اور سسر کے جرم میں شراکت و معاونت پر ایک سال قید کی سزا کا حکم دیا گیا ہے۔

کیپٹن (ر) صفدر کو اتوار 8 جولائی 2018ء کو گرفتار کرکے اڈیالہ جیل منتقل کیا جاچکا ہے۔

دیکھیں : نواز شریف اور مریم نواز واپسی کیلئے روانہ ، تصاویر آگئیں

نواز شریف اور مریم لندن میں بیگم کلثوم نواز کی تیمارداری کیلئے موجود ہیں، سابق خاتون اول کینسر کے موذی مرض میں مبتلا ہیں، گلے کینسر کے علاج کیلئے ان کی کئی بار کیمو تھراپی بھی کئی گئی تاہم مرض مکمل طور پر ختم نہیں ہوسکا۔ البتہ نواز شریف اور مریم نے لندن میں قیام مختصر کرتے ہوئے اعلان کیا کہ وہ وطن واپس آرہے ہیں۔

نیب قوانین کے مطابق کوئی بھی سزا یافتہ شخص عدالتی فیصلے کیخلاف 10 روز کے اندر اپیل کر سکتا ہے۔

نواز شریف اور مریم کا طیارہ جمعہ 13 جولائی کی شام سوا 6 بجے لاہور کے علامہ اقبال ایئرپورٹ پر لینڈ کرے گا، امکان ہے کہ سیکیورٹی حکام انہیں گرفتار کرکے ہیلی کاپٹر کے ذریعے براہ راست اڈیالہ جیل لے جائیں گے۔

مسلم لیگ ن کے صدر اور نواز شریف کے چھوٹے بھائی شہباز شریف، سابق وزیراعظم کے استقبال کیلئے ریلی کی قیادت کریں گے۔ پولیس حکام نے مسلم لیگ ن کے 300 سے زائد کارکنان کو گرفتار کرلیا اور انہیں امن و امان کا قیام (پبلک آرڈر آرڈیننس) یقینی بنانے کیلئے جیل منتقل کردیا گیا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube