سوشل میڈیا پر پاکستان کے مقبول ترین رہنما

Samaa Web Desk
July 10, 2018

سوشل میڈیا پر الیکشن مہم تیز ہے ۔ چاہے وہ سپورٹرز ہو یا بوٹس ۔ اب یہ جان لیتے ہیں کہ کون سی جماعت سب سے زیادہ سرگرم ہے ۔ کون سا لیڈر سوشل میڈیا پر دوسروں سے آگے ہے ۔

سوشل میڈیا انتخابی مہم کا بھی سب سے بڑا ذریعہ بن گیا۔ انتخابی دنگل قریب آتے ہی سیاسی پینتروں کے ساتھ سوشل میڈیا پر بھی داؤ پیچ جاری ہیں۔

عمران خان، مریم نواز، شہباز شریف ہوں یا بلاول بھٹو زرداری، سب کی سوشل میڈیا پر سرگرمیاں بڑھ گئیں۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان ٹوئیٹر پر مقبول ترین پاکستانی لیڈر ہیں۔ ان کے اسی لاکھ سے زیادہ زیادہ فالوورز ہیں۔ عمران خان روزانہ چار پانچ ٹوئیٹ کر کے سیاسی اور اہم امور پر اظہار خیال کرتے ہیں۔

الیکشن قریب آیا تو جلسوں کا احوال، سیاسی مخالفین پر تنقید اور انتخابی مہم کی تشہیر بھی ٹوئیٹر پر بھرپور طریقے سے جاری ہے۔

پی ٹی آئی کے آفیشل پیج سے تو روزآنہ سیکڑوں ٹوئیٹس میں ویڈیو، تصویر یا تحریر کے ذریعے پارٹی کا پیغام لاکھوں لوگوں تک پہنچایا جارہا ہے۔

ٹوئیٹر پر دوسری مقبول ترین پاکستانی لیڈر مریم نواز شریف ہیں۔ مریم نواز کے ٹوئیٹر فالوورز کی تعداد سینتالیس لاکھ ساٹھ ہزار ہے۔

مخالفین پر تنقیدی وار ہو یا اپنے نظریات کا پرچار، مریم نواز ٹوئیٹر پر خوب متحرک ہوگئی ہیں۔ اپنے سیاسی عزائم کا اظہار اپنی تحریر کے ساتھ ساتھ دوسروں کے پیغامات ری ٹوئیٹ کرکے بھی کرتی ہیں۔

والدہ کی بیماری، احتساب عدالت کے فیصلے پر ردعمل یا واپسی کی تفصیلات سب کچھ ٹوئیٹر پر ہی بتایا۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے آفیشل پیج سے بھی انتخابی مہم زور و شور سے چلائی جارہی ہے۔

بڑے میاں صاحب تو ٹوئیٹر پر نہیں مگر چھوٹے میاں اس پلیٹ فارم پر بھی سرگرم ہیں اور چالیس لاکھ سے زائد فالوورز کے ساتھ مقبولیت میں تیسرے نمبر پر ہیں۔

انتخابی موسم میں شہباز شریف کی ٹوئیٹر پر فعالیت بھی بڑھ گئی ہے اور ہر جلسے، ہر موقع کی تصویر و تفصیل وہ اپنے مداحوں سے شیئر کرتے ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری کے ٹوئیٹر پر ساڑھے ستائیس لاکھ فالوورز ہیں۔ انتخابی موسم میں بلاول بھی سوشل میڈیا پر مزید متحرک ہوگئے ہیں۔ اپنے ہر جلسے کی ویڈیو اور تصاویر شیئر کرتے ہیں۔

سیاسی جماعتوں کے مرکزی رہنماؤں کے ساتھ ساتھ دیگر رہنما بھی الیکشن قریب آتے ہی سوشل میڈیا پر خوب فعال ہوگئے ہیں۔ کچھ رہنماؤں نے تو اپنے حلقوں کے الگ الگ پیج بنالیے ہیں۔ جن کے ذریعے انتخابی مہم چلائی جارہی ہے۔