کیپٹن صفدر کو گرفتار کرنے نیب کی ٹیم پہنچ گئی

July 8, 2018

ARTWORK: Ayesha Athar

نا اہل وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کی گرفتاری کیلئے نیب کی ٹیم مانسہرہ پہنچ گئی۔ نیب حکام کے مطابق محمد صفدر گزشتہ روز سے غائب ہیں، جس کے بعد ایبٹ آباد، مانسہرہ اور ہری پور میں ان کے گھروں کی نگرانی شروع کردی گئی ہے۔

نا اہل وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کی گرفتاری کیلئے نیب کی ٹیم مانسہرہ پہنچ گئی۔ نیب حکام کے مطابق محمد صفدر گزشتہ روز سے غائب ہیں، جس کے بعد ایبٹ آباد، مانسہرہ اور ہری پور میں ان کے گھروں کی نگرانی شروع کردی گئی ہے۔

نوازشریف کو10،مریم کو7سال سزا،فلیٹس ضبط کرنیکا حکم

نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ محمد صفدر کی گرفتاری کیلئے خیبر پختونخوا پولیس اور انتظامیہ بھرپور تعاون کر رہے ہیں۔ محمد صفدر کو اتوار کے روز قانون کے مطابق گرفتار کیا جائے گا۔

دوسری جانب نیب راول پنڈی کی ٹیمیں پہلے سے ہی ایبٹ آباد اور مانسہرہ میں موجود ہیں۔ نیب افسران کے مطابق محمد صفدر کا موبائل فون بند ہے، جب کہ ان کی گرفتاری کیلئے ٹیموں کی جانب سے چھاپے مارے جا رہے ہیں، تاہم گرفتاری پولیس کے تعاون سے کی جائے گی۔

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کا نام بلیک لسٹ میں شامل

واضح رہے کہ ہفتہ کے روز نا اہل وزیراعظم نواز شریف کے داماد کا نام بلیک لسٹ میں شامل کیا گیا تھا۔ حکام کے مطابق محمد صفدر کا بام بلیک لسٹ میں شامل کرنے کا مقصد ان کو بیرون ملک فرار ہونے سے روکنا ہے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ جمعہ چھ جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں نواز شریف کی صحبزادی مریم نواز کے شوہر کیپٹن محمد صفدر کو ایک سال قید با مشقت کی سزا سنائی گئی ہے۔

ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کا بھی نوازشریف کیخلاف تحقیقات کامطالبہ

ڈپٹی پراسیکیوٹر نیب سردار مظفر کے مطابق محمد صفدر کو بطور گواہ ٹرسٹ ڈیڈ پر دستخط کرنے اور جرم میں معاونت کرنے پر ایک سال قید بامشقت کی سزا سنائی گئی ہے۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے سزا کے بعد محمد صفدر کو عام انتخابات 2018 کیلئے نا اہل قرار دیا گیا ہے، محمد صفدر این اے 14 مانسہرہ سے ن لیگ کے ٹکٹ پر امیدوار کھڑے ہوئے تھے۔