Tuesday, December 1, 2020  | 14 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

اسلام آبادمیں نجی ٹینکرزکےخلاف قوانین کیوں نہیں بنائے،چیف جسٹس برہم

SAMAA | - Posted: Jun 8, 2018 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 8, 2018 | Last Updated: 2 years ago

جڑواں شہروں ميں پانی کی قلت پرسپريم کورٹ نےچیئرمین سی ڈی اےکوطلب کرلیا۔چيف جسٹس نےريمارکس ديئےکہ اسلام آباد تباہ ہورہا ہے۔حکومت نے نجی ٹینکرز کےحوالے سے قوانین کیوں نہیں بنائے؟عدالت نےوارننگ دی کہ دو ہفتے میں قوانین نہ بنے تو کارروائی کریں گے۔  سپريم کورٹ ميں پانی کی قلت پر ازخود نوٹس کی سماعت ہوئی۔...

جڑواں شہروں ميں پانی کی قلت پرسپريم کورٹ نےچیئرمین سی ڈی اےکوطلب کرلیا۔چيف جسٹس نےريمارکس ديئےکہ اسلام آباد تباہ ہورہا ہے۔حکومت نے نجی ٹینکرز کےحوالے سے قوانین کیوں نہیں بنائے؟عدالت نےوارننگ دی کہ دو ہفتے میں قوانین نہ بنے تو کارروائی کریں گے۔ 

سپريم کورٹ ميں پانی کی قلت پر ازخود نوٹس کی سماعت ہوئی۔ سابق لیگی ایم این اے ملک ابرار، پی پی رہنماءزمردخان بھائي سميت پيش ہوئے۔ چيف جسٹس ثاقب نثار نے ملک ابرار سے پوچھا کہ کیا آپ ٹیوب ویل لگاکرٹینکرز کوپانی دےرہے ہیں؟ملک ابرارنے جواب دیاکہ ميراکوئي ٹيوب ويل نہيں۔

عدالت نے پي پي رہنماء سے کہا کہ زمرد خان آپ بتائیں، يہي الزام آپ پر بھي ہے۔نفي ميں جواب ملنے پر چيف جسٹس نے دونوں سے بيان حلفي مانگ لئے،ليگي رہنما کو وارننگ  بھي دي کہ غلط بیانی کی تو توہین عدالت کی کارروائی ہوگی۔

چيف جسٹس ثاقب نثار نے سوال اٹھاياکہ حکومت نے نجی ٹینکرز کے حوالے سے قوانین کیوں نہیں بنائے۔؟اسلام آباد برباد ہورہا ہے۔نجی ٹینکرز والے سرکاری پانی ليکر پیسے بھی نہیں دیتے،دوہفتوں میں قوانین نہ بنےتو کارروائی کریں گے۔

نمائندہ میونسپل کارپوريشن نے عدالت سے پندرہ روز کا وقت مانگ لیا۔عدالت نےسی ڈی اےاورمیونسپل کارپوریشن کومشترکہ حکمت عملی بنانے کي ہدايت اورغیرقانونی ٹیوب ویلز کی تفصیلات بھي مانگ ليں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube