Saturday, November 28, 2020  | 11 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

انتخابات 2018 کے لیے الیکشن کمیشن نے ضابطہ اخلاق جاری کر دیا

SAMAA | - Posted: May 31, 2018 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: May 31, 2018 | Last Updated: 2 years ago

عالمی مبصرین پاکستان میں انتخابی عمل کا مشاہدے الیکشن کمیشن کی اجازت کے بغیرنہیں کرسکتے۔ الیکشن کمیشن نے ضابطہ اخلاق جاری کر دیا۔

پولنگ عملے اور سیکیورٹی اہلکاروں کو بھی خصوصی کوڈ آف کنڈکٹ کے تحت فرائض انجام دینے ہوں گے ۔

انتخابی عملہ ہو، سیکیورٹی پر مامور اہلکار، یا پھر غیرملکی مبصرین، الیکشن کمیشن نے ہرایک کیلئے الگ الگ حد مقرر کر دی۔

غیرملکی مبصرین کیلئے 14 نکاتی ضابطہ کے مطابق، مبصرین اجازت نامے کے بغیر انتخابی عمل کا مشاہدے نہیں کرسکتے۔ ملکی سالمیت، قوانین اور انتخابی عملے کے اختیارات کا احترام کرنا ہوگا۔

میڈیا پر انتخابی عمل سے متعلق ذاتی رائے دینے کی اجازت بھی نہیں ہوگی۔

الیکشن کمیشن نے انتخابی عملے کیلئے بھی کوڈ آف کنڈکٹ جاری کیا ہے۔ تیرہ نکاتی ضابطہ اخلاق کے مطابق عملہ اپنی ذمہ داریاں غیر جانبداری سے ادا کرے گا۔

عملہ کسی سیاسی کارروائی یا انتخابی مہم کا حصہ نہیں بنے گا۔ حق رائے دہی کی رازداری کو یقینی بنائے گا۔

الیکشن کمیشن کے عملے کو کسی پارٹی کے انتخابی نشان کا بیچ لگانے کی اجازت بھی نہیں ہوگی۔

سیکیورٹی پر مامور اہلکاروں کیلئے جاری گیارہ نکاتی ضابطہ اخلاق کے تحت اہلکار پولنگ اسٹیشن کی حدود سے باہر رہیں گے۔

پریزائیڈنگ آفیسر کے حکم کے بغیر اسٹیشن حدود میں داخل نہیں ہوں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube