Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

کوئٹہ،انصاف کی فراہمی کے جہاد میں ججز کردار ادا کریں

SAMAA | - Posted: Apr 11, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Apr 11, 2018 | Last Updated: 4 years ago

کوئٹہ : چیف جسٹس ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ ججز کو اپنے قوانین اور اختیارات کا پتا ہونا چاہیے، ججز جوڈیشل نظام کے بنیادی ستون ہیں۔

کوئٹہ میں بلوچستان ہائی کورٹ کی تقریب سے خطاب میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ ججز جوڈیشل نظام کے بنیادی ستون ہیں،انصاف کی فراہمی کیلئے لوگ آپ کی طرف دیکھتے ہیں، ججز کو صرف اور صرف قانون کے مطابق فیصلے کرنا ہوں گے۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ مجھے افسوس ہے کہ ہم اپنی صلاحیتّوں کے مطابق فیصلے نہیں کرتے، ساِئلین کو انصاف کے حصول کے لیے 30 سے 40 سال تک انتظار کرنا پڑتا ہے، جس کے لیے انہیں ہر دن جینا مرنا پڑتا ہے اور اس کی ذمہ داری ہم پر عائد ہوتی ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ سمجھ نہیں آتا ہم مقدمات کو اتنا طول کیوں دیتے ہیں، ہمیں فوری انصاف کے حصول کو ممکن بنانا ہوگا، ہمارے پاس محدود وسائل ہیں اور اس میں رہ کر ہی ہم نے لوگوں کو انصاف مہیا کرنا ہے، حکومت کی طرف سے کسی قسم کی سہولیات نہ ہونے کے باوجود بھی ہمیں اپنا کام کرنا ہے اور انصاف کی فراہمی کا جو جہاد ہم نے شروع کیا ہے، اس میں ججز کردار ادا کریں۔

ثاقب نثار کا مزید کہنا تھا کہ ججز کو قوانین اور اپنے اختیارات کا پتہ ہونا چاہیَے، میں حیران ہوں کہ وہ قابل ججز کہاں چلے گئے جن کے فیصلوں پر ایک بھی کٹنگ نہیں ہوتی تھی لوگ اب عدلیہ سے بد ظن ہوتے جارہے ہیں، اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنے گھر کو ٹھیک کریں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube