Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

ن لیگ کے بعد پی پی پی رہنماء کی بھی عدلیہ پر تنقید

SAMAA | - Posted: Mar 6, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 6, 2018 | Last Updated: 4 years ago

اسلام آباد : پاکستان پيپلز پارٹی کے رہنماء فرحت اللہ بابر کی سينيٹ اجلاس ميں آئينی ادارے پر تنقيد، کہتے ہيں جج صاحبان اپنا وقار بڑھانے کیلئے توہین عدالت قانون کا سہارا لیتے ہیں، فیض آباد دھرنے میں جمہوری حکومت کو سرنگوں کرایا گیا، ریاست کے اندر ریاست بنادی گئی۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماء...

اسلام آباد : پاکستان پيپلز پارٹی کے رہنماء فرحت اللہ بابر کی سينيٹ اجلاس ميں آئينی ادارے پر تنقيد، کہتے ہيں جج صاحبان اپنا وقار بڑھانے کیلئے توہین عدالت قانون کا سہارا لیتے ہیں، فیض آباد دھرنے میں جمہوری حکومت کو سرنگوں کرایا گیا، ریاست کے اندر ریاست بنادی گئی۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماء سینیٹر فرحت اللہ بابر سینیٹ اجلاس کے دوران آئینی ادارے پر کڑی تنقید کرگئے، بولے کہ بابا رحمتے کہتے ہیں کہ آئین پارلیمنٹ سے بالاتر ہے، آئین وہ ہے جو میں کہتا ہوں، خدا کیلئے ایسا راستہ اختیار نہ کریں کہ آئندہ الیکشن ریفرنڈم میں بدل جائے، جج صاحبان اپنا وقار بڑھانے کیلئے توہین عدالت قانون کا سہارا لیتے ہیں، جج آئین کے بجائے اشعار کا حوالہ دیتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ فیض آباد دھرنے میں جمہوری حکومت کو سرنگوں کرایا گیا، ریاست کے اندر ریاست بنادی گئی، افسوس میری جماعت نے بھی پارلیمان کی آزادی پر سمجھوتہ کيا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube