Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

مدعی اور حکمران نہیں، منصب بنو، مریم نواز شریف کی ججز پر کھل کر تنقید

SAMAA | - Posted: Feb 24, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Feb 24, 2018 | Last Updated: 4 years ago

سرگودھا: سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز ایک بار پھر ججز کیخلاف پھٹ پڑیں، (ن) لیگ کے سوشل میڈیا کنونشن میں دھواں دھار خطاب کرتے ہوئے کہ انہوں نے کہا کہ اپنا اپنا کام کرو، مدعی اور حکمران نہیں منصف بنو، نواز شریف کیخلاف کیس سننے کیلئے یہی پانچ جج ہیں، عوام...

سرگودھا: سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز ایک بار پھر ججز کیخلاف پھٹ پڑیں، (ن) لیگ کے سوشل میڈیا کنونشن میں دھواں دھار خطاب کرتے ہوئے کہ انہوں نے کہا کہ اپنا اپنا کام کرو، مدعی اور حکمران نہیں منصف بنو، نواز شریف کیخلاف کیس سننے کیلئے یہی پانچ جج ہیں، عوام کی عدالت میں نواز شریف کا نہیں بلکہ پاکستان کا مقدمہ لائی ہوں۔

سرگودھا میں مسلم لیگ ن کے سوشل میڈیا کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے ایک بار پھر عدلیہ اور سپریم کورٹ کے ججز کو تنقید کا نشانہ بنایا، بولیں کہ پاکستان اب تک مولوی تمیز الدین اور جسٹس منیر کے فیصلوں کو رو رہا ہے، عوام کی عدالت میں نواز شریف کا نہیں بلکہ پاکستان کا مقدمہ لائی ہوں، ہم آمریت کے اندھیروں کو مٹانے کی کوشش کررہے ہیں، ہم نے بجائے غلطیوں سے سیکھنے کے مسلم لیگ کو سینیٹ کے الیکشن سے اٹھا کر باہر پھینک دیا۔

وہ بولیں کہ کیا کسی نے کبھی دیکھا کہ سب سے زیادہ عوامی ووٹ حاصل کرنیوالی پوری جماعت کو الیکشن سے باہر کردیا ہو، مذاق شیر کے نشان اور مسلم لیگ کے ساتھ ہوا ہے، یہ نواز شریف نہیں بلکہ عوام کے ساتھ مذاق ہے، عوام کی رائے پر اپنی رائے بندوق یا قلم کے ذریعے نافذ کرنا آمریت ہے، نواز شریف دلوں میں بستا ہے، نواز شریف وزرات عظمیٰ یا صدارت کی وجہ سے نواز شریف نہیں بنا بلکہ اللہ کے کرم اور عوام کی محبت سے بنا ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ نواز شریف کو دلوں اور سیاست سے نکالنے کیلئے کروڑوں لوگوں کو بھی نا اہل کرنا پڑے گا، پرویز مشرف نے چیف جسٹس سمیت 60 ججز کو نکال کر باہر کردیا تھا، عدلیہ اپنی بحالی کیلئے نکلی تو نواز شریف نے تحریک چلائی تھی، وہ عدلیہ کیلئے تحریک چلائے تو جائز اور اپنے ووٹوں کے تقدس کیلئے عوام میں جائے تو غلط ہے، ، نواز شریف کی طاقت میں کمی نہیں آئی بلکہ وہ مزید مضبوط ہوگئے۔

ن لیگی رہنماء نے ججز پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ دنیا میں ملزم کو شک ہوتا ہے کہ مقدمہ سننے والا جج انصاف نہیں کرسکتا اور بغض و عناد رکھتا ہے تو اس میں اخلاقی جرات ہوتی ہے کہ وہ خود بینچ سے ہٹ جاتا ہے لیکن یہاں پانامہ کا 5 رکنی اسکواڈ نواز شریف کے خلاف ہر وقت تیار رہتا ہے، سپریم کورٹ کے 7 ججز نواز شریف کے مقدمے سن رہے ہیں لیکن ہزاروں اور لاکھوں کی تعداد میں عوام انصاف کے منتظر ہیں، اپنا اپنا کام کرو، مدعی اور حکمران نہیں منصف بنو اور نہ ہی آئین پاکستان کہتا ہے منصف حکمران ہیں، حکومت چلانا عوام پر چھوڑ دو اور مقدس اداروں کو سیاسی لڑائی میں مٹ گھسیٹو۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube