راؤ انوار نے چیف جسٹس پاکستان کو خط لکھ دیا

راؤ انوار نے چیف جسٹس پاکستان کو خط لکھ دیا

Samaa Web Desk
February 13, 2018

اسلام آباد : نقیب اللہ محسود قتل کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان کا کہنا تھا کہ راؤ انوار نے انہیں خط لکھا ہے اور صفائی کا موقع مانگا ہے اور کہا ہے کہ مجھے گرفتار نہ کیا جائے عدالت آنے دیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان میں نقیب اللہ محسود قتل کے از خود نوٹس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔

اس موقع پر چیف جسٹس آف پاکستان نے کمرہ عدالت میں موجود افسران کو بتاتے ہوئے انکشاف کیا کہ مفرور پولیس افسر راؤ انوار نے انہیں خط لکھا ہے۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان کا کہنا تھا کہ انہیں گرفتار نہ کیا جائے، بلکہ انہیں سپریم کورٹ میں پیش ہونے کا موقع دیا جائے۔ اس موقع پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ راؤ انوار کیلئے جے آئی ٹی بنا دیتے ہیں۔

انہوں نے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ راؤ انوار کو کچھ ہوا تو تمام شواہد ختم ہوجائیں گے، اس موقع پر راؤ انوار کا لکھا ہوا خط آئی سندھ کو بھی دکھایا گیا، جس پر آئی جی سندھ  اے ڈی خواجہ کا کہنا تھا کہ خط پر دستخط تو راؤ انوار کے لگتے ہیں، سماعت کے اختتام پر جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ راؤ انوار کا اپنے خط میں کہنا ہے کہ وہ بے گناہ ہے، راؤ انوار کہتا ہے کہ اس کا واقعہ سے کوئی تعلق نہیں۔ سماء