نیوائیرنائٹ پر کانسٹیبل کو کچلنے کا واقعہ، ملزمان کا جسمانی ریمانڈ منظور

January 4, 2018

لاہور: انسداد دہشت گردی عدالت نے کانسٹیبل کوکچلنے کے کیس میں کارمالک مصطفیٰ اورڈرائیورسعید کو سات روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا، سی سی پی او کہتے ہیں کیس میں کسی کا کوئی دباو نہیں ۔

نیوائیرنائٹ کی مستیوں میں کانسٹیبل کو کچلنے کے واقعہ میں کار کے مالک مصطفیٰ اور ڈرائیور سعید کا سات روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا گیا ملزم طحہ کو شناخت پریڈ کے لئے جیل بھجوادیا گیا۔

پولیس نے تین ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا، وکیل صفائی نے مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات شامل کرنے کی مخالفت کی ، جسے عدالت نے رد کردیا ۔

ملزمان کے وکیل نے کہا کہ ایک ایکسیڈنٹ ہے اس میں انسداد دہشت گردی کی دفعات پتہ نہیں کیوں لگائی گئیں۔

سی سی پی اولاہورنے وضاحت کی کہ فوٹیج کی مدد سے ملزمان کی شناخت میں تھوڑا وقت لگا، تفتیش میں سستی نہیں دکھائی گئی، سی سی پی او لاہور کا کہنا تھا کہ ملزمان کا دانستہ اقدام ہے اس لئے دہشت گردی کی دفعات شامل کی گئیں

نیوائیرنائٹ کو پیش آنے والے اس واقعہ میں کانسٹیبل مستنصرجاں بحق اور کانسٹیبل قاسم شدید زخمی ہوگئے تھے ۔

Email This Post
 
 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.