پی ٹی آئی کی ریلی پر پولیس کا لاٹھی چارج، رہنماؤں سمیت 20 گرفتار

January 3, 2018

کراچی : پاکستان تحریک انصاف کی کسانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے نکالی گئی ریلی کے شرکاء پر پولیس نے لاٹھی چارج کردیا، وزیراعلیٰ ہاؤس جانے کی کوشش پر حلیم عادل شیخ سمیت 20 افراد کو حراست میں لے لیا گیا جبکہ کئی افراد زخمی بھی ہوگئے، مظاہرین نے میٹروپول کے قریب اسٹیٹ گیسٹ ہاؤس پر دھرنا دے دیا۔

پاکستان تحریک انصاف نے کسانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے انصاف ہاؤس سے وزیراعلیٰ ہاؤس تک ریلی نکالی تاہم ریڈ زون میں داخلے سے پہلے ہی شرکاء کو روک لیا گیا، دوسری جانب حیدر آباد سے کسان ایکشن کمیٹی اور پی ٹی آئی کی مشترکہ ریلی بھی حیدر آباد سے کراچی پہنچ گئی۔

میٹروپول ہوٹل کے قریب جمع ہونے والے پی ٹی آئی کے کارکنوں نے جب وزیراعلیٰ ہاؤس کی جانب جانے کی کوشش کی تو پولیس کی جانب سے شدید مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا، پولیس نے مظاہرین پر لاٹھی چارج کردیا، حلیم عادل شیخ سمیت 20 افراد کو حراست میں لے لیا گیا، ریلی کے شرکاء کو منتشر کرنے کیلئے واٹر کینن کا بھی استعمال کیا گیا۔

کسانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے نکالی گئی ریلی کے شرکاء نے میٹروپول کے قریب اسٹیٹ گیسٹ ہاؤس پر دھرنا دے دیا، پولیس کیخلاف نعرے لگائے اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ کسانوں کے جائز مطالبات تسلیم کئے جائیں۔

پی ٹی آئی رہنماء عمران اسماعیل نے ریلی کے شرکاء پر پولیس کے لاٹھی چارج کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہم پرامن احتجاج کررہے تھے، نہتی خواتین پر لاٹھی چارج اور شیلنگ کی گئی، ہمارے 5 سے زائد کارکنان زخمی ہوکر اسپتال پہنچ گئے، پیپلزپارٹی نے ہمیں ہاری سمجھا ہوا ہے۔ سماء

Email This Post
 
 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.