آئس نشے کی لعنت روکنے کیلئے خیبرپختونخوا حکومت کا بڑا فیصلہ

January 25, 2018

پشاور : خیبرپختونخوا حکومت نے نوجوانوں کو نشے کی لعنت سے بچانے کیلئے بڑا فیصلہ کرلیا، آئس کا نشہ کرو گے تو پھانسی چڑھو گے، خیبرپختونخوا میں آئس بیچنے اور خریدنے والوں کو سزائے موت دینے کی تجویز دے دی گئی۔

خیرپختونخوا حکومت نے نشے کی لعنت کے خاتمے کیلئے بڑا فیصلہ کرلیا، صوبے میں آئس کا نشہ بیچنے اور خریدنے والوں کو سزائے موت دینے کی تجویز دی گئی ہے جبکہ حکومت نے نارکوٹکس ایکٹ میں ترامیم کیلئے سفارشات تیار کرلیں، عمر قید اور جرمانے کی سزائیں بھی تجویز کردی گئی ہیں۔

دستاویز کے مطابق 1 سے 5 کلو گرام آئس پر عمر قید یا سزائے موت ہوگی، 100 گرام آئس پر 7 سال قید اور 3 لاکھ روپے جرمانے کی تجویز دی گئی ہے جبکہ 100 گرام سے زائد آئس پر 10 سال قید اور 5 لاکھ روپے جرمانہ زیر غور ہے۔

واضح رہے کہ آئس کا نشہ انتہائی خطرناک اور جان لیوا ہے، خیبرپختونخوا اس لعنت کے باعث متعدد افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں جبکہ نوجوانوں میں یہ نشہ کافی تیزی سے مقبول ہورہا ہے، خطرناک نشے سے اسکول اور کالجز کے طلبہ و طالبات بھی متاثر ہورہے ہیں۔ سماء