پاکستان کی کرم ایجنسی میں ڈرون حملے کی مذمت

SAMAA | - Posted: Jan 24, 2018 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 24, 2018 | Last Updated: 3 years ago

اسلام آباد: پاکستان نے ریزولوٹ سپورٹ مشن (آر ایس ایم) کی جانب سے بدھ کو کرم ایجنسی میں ڈرون حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قسم کی یکطرفہ کارروائیاں پاکستان اور امریکا کے درمیاں دہشت گردی کیخلاف جنگ میں تعاون کے جذبے کیلئے نقصان دہ ہیں۔


دفتر خارجہ کے ترجمان کے مطابق پاکستان نے بدھ کی صبح ریزولوٹ سپورٹ مشن (آر ایس ایم) کی جانب سے کرم ایجنسی میں ڈرون حملے کی مذ مت کی ہے جس نے افغان مہاجر کیمپ کو نشانہ بنایا گیا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان ہمیشہ امریکہ پر قابل عمل اینٹلی جنٹس شیئرنگ کی اہمیت پر زور دیتا رہا ہے تاکہ ہماری فورسز ہمارے علاقائی حدود کے اندر دہشت گردوں کیخلاف مناسب کارروائی کر سکے۔

یہ بھی پرھیئے؛ اورکزئی ایجنسی، کرم ایجنسی میں ڈرون حملے، 2 افراد ہلاک

ترجمان نے کہا کہ پاکستان افغان مہاجرین کی جلد ز جلد واپسی کی ضرورت پر بھی زور دیتا رہا ہے کیونکہ پاکستان میں انکی موجودگی افغان دہشت گردوں کو پناہ گاہوں کی فراہمی میں مدد گار ہوتی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ اس قسم کی یکطرفہ کارروائیاں، جیسا کہ آج کی گئی، پاکستان اور امریکا کے درمیاں دہشت گردی کیخلاف جنگ میں تعاون کے جذبے کیلئے نقصان دہ ہیں۔

ترجمان کے مطابق پاکستان انٹیلی جنس شیئرنگ کے ذریعے خود کارروائی کرنا چاہتے ہیں، لیکن ڈرون حملے قابل قبول نہیں۔ دہشتگردعناصر افغان مہاجرین کیمپوں میں ان کے بھیس میں رہے ہیں، اسلئے پاکستان افغان مہاجرین کی جلد واپسی پر زور دے رہا ہے۔

واضح رہے کہ اورکزئی ایجنسی اور کرم ایجنسی کے سرحدی علاقے اسپن ٹل ڈپہ ماموزئی میں ڈرون حملہ کیا گیا۔ حملے میں ایک گھر پر 2 میزائل داغے گئے، جس سے حقانی گروپ کے کمانڈر احسان عرف نورے سمیت 2 افراد ہلاک ہوگئے۔ سماء

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube