زینب کے والد کا بچی کی تدفین سے انکار

January 10, 2018

قصور : اتنا ظلم ہوا ہے بتا نہیں سکتے، گھر والوں نے بتایا پولیس گھر آتی اور چائے پی کر چلی جاتی تھی، پولیس تعاون نہیں کررہی، زینب کے والد کہتے ہیں مسئلے کے حل تک تدفین نہیں کریں گے۔

قصور میں زیادتی کے بعد قتل 7 سالہ بچی زینب کے والد کا کہنا ہے کہ ہمارے ساتھ اندوہناک سانحہ ہوا ہے، ابھی تو ہمیں ہوش بھی نہیں آیا، پولیس چکر لگاکر چائے پی کر چلی گئی، پولیس کا کوئی خاطر خواہ تعاون حاصل نہیں رہا۔

انہوں نے کہا کہ جب تک مسئلہ حل نہیں ہوتا بچی کی تدفین نہیں کریں گے، ملک میں عام انسان کو کوئی تحفظ حاصل نہیں، ظالم حکمران عوام کو کیڑے مکوڑے سمجھتے ہیں، چیف جسٹس اور آرمی چیف سوموٹو نوٹس لیں۔ سماء