سینٹرل جیل میں کالا دھندہ عروج پرپہنچ گیا

Samaa Web Desk
September 28, 2017

کراچی:سینٹرل جیل سے دہشت گردوں کے فرار کی دھول بیٹھی نہیں تھی کہ منشیات فروشی اور اغوا برائے تاوان کا بھی انکشاف ہوگیا۔قیدیوں کو منشیات فروخت کیلئے دی جاتی ہےاور اغوا برائے تاوان میں قیدی کو دو سے تین لاکھ روپے ملتے ہیں۔

مجرم ہی نہیؔں، کراچی سینٹرل جیل میں تو جرائم بھی ہوتے ہیں۔قیدی تاجو نے تہلکہ خیز انکشافات کردیے۔

منشیات کون لاتا ہے، کون فروخت کرتا ہے،قیدی تاجو نےسب بتادیا۔جوئے،شراب سے لے کرقاتلوں کی ضمانت تک بھی تاجونے سنگین انکشافات کئے۔

قیدی نے پولیس وردی میں بھی ویڈیو بنائی اور اغوا برائے تاوان بھی کا بھانڈا پھوڑا۔ جیل میں آزادانہ جرائم بھی ہوتے رہےاورقیدی ویڈیوز بھی دھڑلے سے بناتے رہے اور جیل حکام سوتے رہے۔  سماء