Monday, December 6, 2021  | 30 Rabiulakhir, 1443

وزیرداخلہ کاخاتون کوتھپڑ مارنے کی تحقیقات کا حکم

SAMAA | - Posted: Oct 21, 2016 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 21, 2016 | Last Updated: 5 years ago

اسلام آباد: نجی ٹی وی چینل کی خاتون اینکرکو تھپڑ مارنے کے معاملے پرفرنٹیئر کانسٹیبلری بھی اپنے اہلکار سید حسن کی حمایت میں آگئی ہے۔ ذرائع کے مطابق ایف سی نے بھی واقعے کی ایف آئی آر درج کرادی ہے۔ وزیرداخلہ چوہدری نثار نے  معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔ گزشتہ روز کراچی میں...

اسلام آباد: نجی ٹی وی چینل کی خاتون اینکرکو تھپڑ مارنے کے معاملے پرفرنٹیئر کانسٹیبلری بھی اپنے اہلکار سید حسن کی حمایت میں آگئی ہے۔ ذرائع کے مطابق ایف سی نے بھی واقعے کی ایف آئی آر درج کرادی ہے۔ وزیرداخلہ چوہدری نثار نے  معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔

گزشتہ روز کراچی میں کوریج کے دوران نادرا آفس میں تعینات ایف سی اہلکار کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے 21 کی اینکر کو تھپڑ مارنے کے معاملے پر ایف سی بھی میدان میں آ گئی۔ فرنٹیئر کانسٹٰیبلری نے  اپنے اہلکار کی حمایت کرتے ہوئے واقعے کی ایف آئی درج کروا دی ہے۔

K21 Anchor Full Slap 21-10

ذرائع کے مطابق ایف سی کی جانب سے درج کرائی گئی ایف آئی آر کے مندرجات میں ملبہ خاتون اینکر پر ڈالا گیا ہے کہ خاتون صحافی نے پہلے ایف سی اہلکار کی یونیفارم کو پکڑ کر کھینچا تھا۔

نادرا ذڑائع کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کو واقعے کی تمام تفصیلات سے آگاہ کردیا گیا ہے جبکہ واقعے کی مکمل فوٹیجز بھی وزیرداخلہ کو ارسال کی گئی ہیں جس کے بعد چوہدری نثار نے معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔

K21 Anchor Slap 21-104

واضح رہے کہ  نجی ٹی وی چینل کے 21 کی خاتون نیوز اینکرصائمہ کنول نادرا آفس میں شہریوں کو درپیش مشکلات کے حوالے سے  پروگرام کر رہی تھیں کہ اس دوران انہیں وہاں بطور سیکیورٹی گارڈ تعینات حسن عباس نامی ایف سی اہلکار نے اشتعال میں آ کر تھپڑرسید کردیا۔

واقعے پر ایف سی اہلکار کے خلاف گلبہار تھانے میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

اس حوالے سے موقف دیتے ہوئے صائمہ کنول کا کہنا تھا کہ لیاقت آباد نادرا آفس سے متعلق شکایات مل رہی تھیں، وہاں پروگرام کرنے گئے تو نادرا آفس کی انتظامیہ نے بات کرنے سے انکار کردیا جبکہ ایف سی گارڈ نے پہلے کیمرہ مین پر تشدد کیا۔ ایف سی اہلکار خواتین سے بدتمیزی کررہا تھا، جب اسے روکا گیا تو مجھے  تھپٹر ماردیا۔

صائمہ کنول نے مزید بتایا کہ ایف سی گارڈ کی فائرنگ سے بچی بھی زخمی ہوئی۔  انہوں نے کہا کہ اگرمیڈیا سے یہ سلوک ہوا ہے توعوام کے ساتھ کیا ہوتا ہوگا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube