Monday, December 6, 2021  | 30 Rabiulakhir, 1443

ایف سی اہلکار کے تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون اینکرنے کیا کہا؟

SAMAA | - Posted: Oct 21, 2016 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 21, 2016 | Last Updated: 5 years ago

کراچی: نجی ٹی وی کی اینکر پرسن صائمہ کنول کہتی ہیں لیاقت آباد کے نادرا آفس سے متعلق کافی عرصے سے شکایات موصول ہورہی تھیں۔  پروگرام کرنے گئے توایف سی گارڈ نے تشدد کا نشانہ بنانے کے ساتھ ساتھ فائرنگ بھی کی۔ سما سے ٹیلیفونک گفتگو میں نجی ٹی وی کے 21 کی اینکر صائمہ...

کراچی: نجی ٹی وی کی اینکر پرسن صائمہ کنول کہتی ہیں لیاقت آباد کے نادرا آفس سے متعلق کافی عرصے سے شکایات موصول ہورہی تھیں۔  پروگرام کرنے گئے توایف سی گارڈ نے تشدد کا نشانہ بنانے کے ساتھ ساتھ فائرنگ بھی کی۔

سما سے ٹیلیفونک گفتگو میں نجی ٹی وی کے 21 کی اینکر صائمہ کنول نے اپنا موقف دیتے ہوئے کہا کہ نادرا آفس میں رپورٹنگ کے دوران ایف سی گارڈ نے انہیں تشدد کا نشانہ بنانے کے ساتھ فائرنگ بھی کی ۔جس سے ایک بچی زخمی ہوگئی ۔

صائمہ کنول کا کہنا تھا کہ لیاقت آباد نادرا آفس سے متعلق شکایات مل رہی تھیں، وہاں پروگرام کرنے گئے تو نادرا آفس کی انتظامیہ نے بات کرنے سے انکار کردیا جبکہ ایف سی گارڈ نے پہلے کیمرہ مین پر تشدد کیا۔ ایف سی اہلکار خواتین سے بدتمیزی کررہا تھا، جب اسے روکا گیا تو مجھے  تھپٹر ماردیا۔

صائمہ کنول نے مزید بتایا کہ ایف سی گارڈ کی فائرنگ سے بچی بھی زخمی ہوئی۔  انہوں نے کہا کہ اگرمیڈیا سے یہ سلوک ہوا ہے توعوام کے ساتھ کیا ہوتا ہوگا۔  عوام واقعے کی مکمل ویڈیو دیکھیں تو انہیں اندازہ ہوگا کہ بدتمیزی گارڈ کی جانب سے کی گئی تھی۔

واضح رہے کہ  نجی ٹی وی چینل کے 21 کی خاتون نیوز اینکرصائمہ کنول نادرا آفس میں شہریوں کو درپیش مشکلات کے حوالے سے  پروگرام کر رہی تھیں کہ اس دوران انہیں وہاں بطور سیکیورٹی گارڈ تعینات حسن عباس نامی ایف سی اہلکار نے اشتعال میں آ کر تھپڑرسید کردیا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube