Friday, October 30, 2020  | 12 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Search Terms

کارگل جنگ اور12اکتوبرسےمتعلق پرویزمشرف کےسنسنی خیزانکشافات

SAMAA | - Posted: Oct 12, 2016 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 12, 2016 | Last Updated: 4 years ago

اسلام آباد : سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفت گو کرتے ہوئے سابق صدر اور آرمی چیف جنرل پرویز مشرف نے کئی سنسنی خیز انکشافات کر ڈالے، سابق صدر کا کہنا تھا کہ بارہ اکتوبر کو ٹیک اوور کرنے کا کوئی افسوس نہیں، میری طرف سے پلاننگ ہوتی تو کیا سری لنکا جاتا؟...

اسلام آباد : سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفت گو کرتے ہوئے سابق صدر اور آرمی چیف جنرل پرویز مشرف نے کئی سنسنی خیز انکشافات کر ڈالے، سابق صدر کا کہنا تھا کہ بارہ اکتوبر کو ٹیک اوور کرنے کا کوئی افسوس نہیں، میری طرف سے پلاننگ ہوتی تو کیا سری لنکا جاتا؟

سابق صدر کا کہنا تھا کہ کارگل جنگ کے بعد نواز شریف نے امریکا جانے سے  پہلے کہا سری نگر میں جھنڈا لہراؤ تو مزہ آئے، واپسی پر مجھے گرفتارکرنے کی کوشش کی، مجھے حیرانگی ہے کہ12اکتوبر کیوں ہوا، مجھ سے پہلے کے آرمی چیف  جنرل جہانگیر کرامت کا جانا بھی سوالیہ نشان ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کیا آرمی چیف کو اپنے ملک میں داخل نہ ہونے کا حکم دیا جا سکتا ہے؟ حکم دیا گیا کہ پاکستان کی حدود میں داخل نہ ہوں،ہمیں پڑوسی ملک جانے کا بولا گیا، میں نے کہا بھارت تو میری لاش ہی جا سکتی ہے، میرا ارادہ ہوتا تو بہت بڑی تعداد میں جوان جاتے، اسلام آباد میں تو 2 گاڑیوں میں لوگ گئے تھے،  ایس ایس جی کے لوگ مجھے کبھی نہیں بھول سکتے۔

کارگل جنگ کا ذکر کرتے ہوئے سابق آرمی چیف کا کہنا تھا کہ ہندوستان پرپلڑہ بھاری ہو تو فخرکرنا چاہیے، ہندوستان کی بات کی حمایت کرنا افسوسناک ہے، کارگل میں بھارت کو گردن سے پکڑ لیا تھا، کارگل کا کس بات پر افسوس؟  مجھے کارگل پر فخر ہے، کارگل کے حوالے سے خود کھڑے ہو کر بریفنگ دی، ہم نے بھارت کا راستہ بند کردیا تھا، سیاچن کا پیچھے سے راستہ بھی کاٹ سکتے تھے، بھارت نے امریکا سے کہا کہ پاکستان پر پریشر ڈالیں، امریکا نے پریشر نہیں ڈالا تو بھارت جنیوا چلا گیا۔

ایک سوال کے جواب میں سابق صدر اور آرمی چیف پرویز مشرف کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے پوچھا کیا ہمیں پیچھے ہٹنا چاہیے؟، کہا فوج کی یہ پوزیشن ہے، پیچھے ہٹنے کا فیصلہ آپ کا ہوگا، نواز شریف نے کہا سری نگر میں جھنڈا لہراؤ تو مزہ آئے، مگر پھر اچانک نواز شریف دستبردار ہو کر آگئے تھے، کہنا چاہیے تھا کہ سیاچن سے نکلیں تو کارگل چھوڑیں گے، واجپائی سیاچن، سرکریک اور کشمیر پر بات کر رہےتھے، بھارت جانتا تھا کہ میں کارگل کا منصوبہ ساز ہوں۔ سماء

 
WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube