Sunday, November 28, 2021  | 22 Rabiulakhir, 1443

ہلاک دہشتگرد قیصرکی دو بیٹیاں زیر حراست،جامعہ حفصہ میں زیرتعلیم تھیں

SAMAA | - Posted: Oct 16, 2015 | Last Updated: 6 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 16, 2015 | Last Updated: 6 years ago


راول پنڈی : قانون نافذ کرنے والے اداروں نے گزشتہ روز مارنے جانے والے دہشت گرد قیصر کی دو بیٹیوں کو حراست میں لے کر پوچھ گچھ شروع کردیں، دونوں بیٹیوں لال مسجد کے جامعہ حفصہ میں زیر تعلیم تھیں۔

قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہل کاروں نے دہشت گرد قیصر مصطفیٰ کی دو بیٹیوں کو حراست میں لے لیا ، عطرت اور اقصی نامی لڑکیاں کچھ عرصے سے جامعہ حفصہ اسلام آباد میں زیر تعلیم ہیں، لڑکیوں سے تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

دونوں لڑکیوں کا باپ قیصر مصطفیٰ ایک دہشت گرد تھا، جو جمعرات کے روز قانون نافذ کرنے والے اداروں کے آپریشن میں فائرنگ کے تبادلے کے دوران مارا گیا، واضح رہے کہ تھانہ صدر بیرونی کے علاقے جوڑیاں گاؤں میں مکان پر چھاپے کے دوران سی ٹی ڈی پولیس اور سیکیورٹی فورسز کا دہشت گردوں کیساتھ 8 گھنٹے تک مقابلہ جاری رہا، فائرنگ کے تبادلے میں دہشت گرد قیصر سمیت تین ملک دشمن مارے گئے۔

دہشت گرد صوبائی وزیر شجاع خانزادہ پر حملے میں ملوث تھے، دہشت گردوں کا تعلق قاری سہیل گروپ سے تھا، گرفتاری سے بچنے کیلئے دہشت گرد گھر کے اندر سے سیکیورٹی فورسز پر دستی بم پھینکتے رہے، صبح کے وقت خاتون خود کش بمبار سمیرا نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube